تیل سستا ہونے کا خواب چکنا چور، پٹرولیم مصنوعات پر لیوی 22روپے فی لیٹر کر دی گئی

تیل سستا ہونے کا خواب چکنا چور، پٹرولیم مصنوعات پر لیوی 22روپے فی لیٹر کر دی گئی


اسلام آباد(24نیوز) وزیرخزانہ اسد عمر کے دعوے ہوا ہوگئے۔حکومت نے عوام سےعالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی کا فائدہ چھیننا شروع کردیا۔ پٹرولیم مصنوعات پر لیوی 22 روپے فی لیٹر تک کردی گئی۔

 عوام کو پٹرولیم مصنوعات پر ریلیف دینے کے دعوے ہوا ہوگئے۔ پٹرولیم لیوی کو جگا ٹیکس اور بھتہ قرار دینےوالے اسدعمربھی پرانی ڈگرپرچل پڑے۔ عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات میں قیمتوں میں کمی ہوئی لیکن کمی کا ریلیف عوام کےلیےخواب بن گیا۔حکومت پٹرولیم لیوی کی مد میں عوام سے اربوں روپے کی اضافی وصولیاں کی رہی ہیں۔

وزارت خزانہ نے ہائی سپیڈ ڈیزل پر پیٹرولیم لیوی 8 سے بڑھا کر 22روپے فی لیٹر کردی ہے۔  پٹرول پر عائد لیوی 10 سے بڑھا کر 14روپے فی لیٹر کردیا گیا ہے۔  زیادہ پیڑول خریدنے والی کمپنوں سے لیوی 10 سے بڑھا کر 17روپے 47پیسے فی لیٹر کردیا گیا ہے۔ حکومت مٹی کے تیل پر 7 روپے فی لٹر لیوی وصول کررہی ہے۔ 

وفاقی حکومت نے بجٹ میں پٹرولیم لیوی کی شرح 10 روپے فی لیٹر سے بڑھا کر 30 روپے فی لیٹر تک کردی تھی۔رواں سال جون تک عوام سے 35 ارب روپے سے زائد اضافی وصول کیےجائیں گے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔