ڈاکٹر عامر لیاقت نے طاہر القادری کے حوالے سے بڑی خبر دیدی

ڈاکٹر عامر لیاقت نے طاہر القادری کے حوالے سے بڑی خبر دیدی


لاہور (24 نیوز): معروف اینکر پرسن ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے وزیراعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف اور صوبائی وزیر قانون رانا ثنااللہ کو خود کو قانون کے حوالے کر دینے کا مشورہ دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق معروف اینکر پرسن ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے 24 نیوز چینل کے پروگرام پوائنٹ آف ویو میں بات کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری تحریک قصاص کی قیادت کر رہے ہیں، باقر نجفی کی رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد کیس انصاف کیلئے سیٹ ہوچکا، اب طاہر القادری  نے دھرنا دیا تو سانحہ ماڈل ٹائون کے شہداء کو انصاف ملنے تک دھرنے سے نہیں اُٹھیں گے .

ڈاکٹر عامر لیاقت نے شہباز شریف اور راناثناء اللہ کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ خود کو قانون کے حوالے کردیں  اور فیصلہ قانون کو کرنے دیں کیونکہ جب عوام اپنے معاملات خود درست کرنے پر آتی ہے تو پھر قانون کو بھی بہت سخت فیصلےلینے پڑتے ہیں۔شہباز شریف اور رانا ثنااللہ یہ امید نہ رکھیں کہ کوئی اُنکی مدد کیلئے آئے گا۔

 ایک سوا ل کے جواب میں ڈاکٹر عامر لیاقت نےکہا کہ میرے رب کی شان کے خلاف ہے کہ جو زمین پر طاقتور بنتے ہیں، انہیں بے اختیار کرکے سزا دے، ایک جے آئی ٹی نے سانحہ ماڈل ٹائون کیس میں انہیں بے گناہ قرار دے دیا تھا، پہلے یہ معطل ہوگئے تھے، اللہ نے انہیں سزا نہیں دی کیونکہ یہ بے اختیار ہوگئے تھے، اللہ نے انہیں دوبارہ با اختیار بنایا اور پہلے سے زیادہ طاقتور بنایا، اب ان کی طاقت دیکھ کر نمرود اور شداد کی روحیں بھی شرما جائیں گی۔

انہوں  نے کہا کہ نواز حکومت کا بطور حاکم عدلیہ کا مذاق اُڑانا بہت ضروری تھا، صحافی نے نواز شریف سے سوال کیا کہ عمران خان ریفرنس کا فیصلہ کیا آئے گا تو انہوں نے ہنستے ہوئے جواب دیا کہ مجھے لگتا ہے کہ وہ فیصلہ بھی جلد میرے خلاف آئے گا، یہ بہت بڑا طنز اور تکبر تھا، اللہ تعالیٰ کسی پر ظلم اور کسی سے ناانصافی نہیں کرتا۔