ریلوے ٹریک پر مبینہ قبضہ، وفاقی وزیر شیخ رشید کو نوٹس جاری

ریلوے ٹریک پر مبینہ قبضہ، وفاقی وزیر شیخ رشید کو نوٹس جاری


  24نیوز : چیف جسٹس ثاقب نثار نے چکوال میں ریلوے ٹریک پر مبینہ قبضے اور فروخت سے متعلق کیس میں وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کو 24 دسمبر کو عدالت میں طلب کر لیا ہے۔

 تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے چکوال میں ریلوے ٹریک پر قبضے اور فروخت سے متعلق مقدمے کی سماعت کی۔ درخواست گزار کی ایڈووکیٹ افشاں غضنفر کا کہنا تھا کہ 1994 تک ریلوے ٹریک فعال تھا، 1998 میں ریلوے ٹریک فروخت کردیا گیا۔

ریلوے افسران معاملے پرعدالت کو مطمئن نہ کرسکے جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ایسا ہے تو شیخ رشید کو بلا کرپوچھ  لیتے ہیں۔ عدالت میں ریلوے کے وکیل کا کہنا تھا کہ ریلوے اس معاملے پر سفارشات مرتب کر رہی ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ریلوے اراضی وفاقی یا صوبائی حکومت کی ملکیت ہوتی ہے، یہ ریلوے کی زمین ہے کسی اور مقصد کیلئے استعمال نہیں ہو سکتی، عدالت نے صوبوں کو 3 روز میں ریلوے اراضی کے غلط استعمال سے متعلق تفصیلات فراہم کرنے کا بھی حکم دیا، کیس کی سماعت 24 دسمبر تک ملتوی کر دی گئی۔

شازیہ بشیر

   Shazia Bashir   Edito