پنجاب کے مزید 11 ہسپتالوں میں سہولیات کا فقدان


لاہور (24 نیوز) پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کی صوبے بھر کے 37 ہسپتالوں کی انسپکشن، 11 ہسپتالوں کے 15 آپریشن تھیٹرز میں سرجری روک دی۔

پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے ہسپتالوں کی انسپکشن کی جاری مہم کے دوران 11 ہسپتالوں کے 15 آپریشن تھیٹرز میں صفائی کے غیر تسلی بخش انتظامات پر ہر قسم کی سرجری کی سہولیات معطل کردیں اور 33 ہسپتالوں کو فراہمی صحت کی سہولیات کے کم سے کم معیار پر عمل درآمد نہ کرنے پر اظہار وجوہ کے نوٹسز بھی جاری کر دیے ہیں۔ ان میں 7 ہسپتال ایسے بھی ہیں جنہیں میڈیکل فضلات کو ٹھکانے لگانے کے درست انتظامات نہ ہونے پر نوٹسز جاری کیے گئے ہیں۔

پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کی ٹیموں نے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال عارف والا، کوٹ مومن، بھاگٹاں والا، ساہیوال (سرگودھا)، کبیروالا اور سرائے عالمگیر کا ایک ایک آپریشن تھیٹر جبکہ بیوال انٹرنیشنل ہسپتال گجر خان، لیٹن رحمت اللہ بینیوولنٹ ٹرسٹ فری آئی ہسپتال سرگودھا، ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال چنیوٹ اور تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال خانپور(رحیم یارخان)کے دو دو آپریشن تھیٹرز میں سرجری روک دی ہے۔ ان ہسپتالوں کو پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے یہ حکم بھی دیا ہے کہ ان تمام تھیٹرز میں صفائی کے انتظامات معیار کے مطابق یقینی بنائے جائیں اور پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کو لیبارٹری رپورٹ بھجوائی جائے۔

جن سات ہسپتالوں کو میڈیکل فضلات کو ٹھکانے لگانے کے درست انتظامات نہ ہونے پر بھی نوٹسز جاری کیے گئے ہیں، ان میں بیوال انٹرنیشنل ہسپتال گجر خان، تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال کوٹ مومن، بھاگٹاں والا، ساہیوال (سرگودھا) اور کبیروالا، نشتر انسٹی ٹیوٹ آف ڈینٹسٹری ملتان اور ملتان انسٹی ٹیوٹ آف کڈنی ڈزیزز شامل ہیں۔