ناظرین کیلئے بڑی خبر، معروف اینکر پرسن ڈاکٹر عامر لیاقت حسین پر عائد پابند ی ختم


اسلام آباد (24نیوز) دنیا بھر کے ناظرین کیلئے وہ خبر آگئی جس کا انتظار بڑی بے تابی سے کیا جارہا تھا،سپریم کورٹ نے اہم کیس کا فیصلہ دیا ہے،عدالت عظمیٰ نے اسلام آباد ہائیکورٹ کے فیصلے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے معروف اینکر پرسن،مذہبی سکالر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین پر عائد پابند ی ختم کردی ہے وہ اب 24نیوز پر اپنا پروگرام کرسکیں گے۔
تفصیلات کے مطابق عامر لیاقت حسین کی اپیل پر سماعت کے دوران وکیل بابر اعوان نے کہا کہ اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست گزار نے مقدمہ واپس لے لیا لیکن ہائیکورٹ نے سو موٹو نوٹس لے کر پروگرام بند کردیا۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا کہ ہائیکورٹ کے پاس از خود نوٹس لینے کا اختیار نہیں ہے۔ انہوں نے عامر لیاقت پر عائد پابندی ختم کردی اور وکیل ڈاکٹر بابر اعوان کو مخاطب کر کے کہا کہ اگر عامر لیاقت نے عدالتی حکم کی خلاف ورزی کی تو توہین عدالت کی کارروائی کریں گے۔ عامر لیاقت کو ہماری بات سمجھا دیں، اگر ہمارے احکامات کی پابندی نہیں کریں گے تو ٹی وی پر پروگرام نہیں کر سکیں گے۔ عدالت میں عامر لیاقت معتبر نہیں صرف سائل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں..........ڈاکٹر عامر لیاقت پر پابندی کا معاملہ، درخواست سماعت کیلئے مقرر
یاد رہے معروف اینکر پرسن،مذہبی سکالر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے گزشتہ برس دسمبر میں 24نیوز نیٹ ورک کو بطور صدر جوائن کیا تھا جسے دنیا بھر کے ناظرین نے بے حد سراہا تھا۔

یہ بھی پڑھیں..........صفِ اول کے اینکر پرسن ڈاکٹر عامر لیاقت نے 24نیوز جوائن کر لیا
واضح رہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کے خلاف درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ان کے تاحکم ثانی ٹی وی پر آنے پر پابندی عائد کردی تھی۔ درخواست گزار نے درخواست واپس لی تو جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے سوموٹو نوٹس لے لیا تھا۔

اظہر تھراج

صحافی اور کالم نگار ہیں،مختلف اخبارات ،ٹی وی چینلز میں کام کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں