انسانیت سوز واقعہ،نئے پاکستان میں پولیس بے لگام ہو گئی


کوٹ مٹھن(24نیوز)نئے پاکستان میں پولیس بھی بے لگام ہو گئی، انسانیت کی اتنی تذلیل،کیا ملزم کو حوالات ایسے لایا جاتا ہے؟ ایک شخص کو گھسیٹتے ہو ئے پولیس وین سے نکالا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کوٹ مٹھن کی پولیس کی جانب سے ملزم کی جانوروں سے بھی بڑھ کرتذلیل کی گئی، ملزم کو پولیس اہلکاروں نے موبائل وین سے گھسیٹ کر نکالا، ایسا سلوک کسی جانور کے ساتھ بھی نہیں کیا جاتا جس طرح کا اس انسان کے ساتھ مٹھن کوٹ کی پولیس نے کیا، نشے کا عادی شخص جس کو پولیس اہلکار گھسیٹتے ہو ئے تھانے میں لے جارہے ہیں، پولیس انسانیت نام کی چیز کو بھول گئی اور اس شخص کی جانوروں سے بھی  بڑھ کر تذلیل کی گئی۔

ذرائع کاکہناتھاکہ مقامی ایس ایچ او زمان بھٹی بھی اس موقع پر موجود تھے انہوں نے ابھی تک اس واقعہ پر کوئی کارروائی نہیں کی، ایس ایچ او سے متعدد بار اس واقعہ پر بات کی گئی جس پر انہوں نے بات کرنا مناسب نہیں سمجھا اور خاموش رہے، نئے پاکستان میں پولیس میں کوئی تبدیلی نہیں آئی، غریب ملزمان کے ساتھ ایسا ناروا سلوک کیا جاتا ہے جبکہ بااثر ملزمان کو پروٹوکول کے ساتھ لایا جاتا ہےاور اس کو باعزت طریقے سے تھانے میں لاتے، مگر ایک ایسا شخص جس کو اپنی ہوش نہیں اس کو گھسیٹ کر لایا جارہا ہے۔

ذرائع کا مزید کہنا تھاکہ عملہ کے خلاف کارروائی بھی ہو سکتی ہے، دو اہلکار جو ملزم کو گھسیٹ رہے ہیں ان میں ایک ڈرائیو اور ایک کانسٹیبل ہے ان کے ساتھ اے ایس آئی تھا جو کیمرہ کو دیکھتے ہی غائب ہوگیا۔

24نیوز پر خبر چلنے پر وزیراعلیٰ پنجاب نے واقعہ کا نوٹس لےلیا،وزیراعلیٰ پنجاب عثمان نے انسپکٹر جنرل پولیس سے رپورٹ طلب  کرتےہوئےواقعہ کی تحقیقات کاحکم دیا، وزیراعلیٰ پنجاب کا کہناتھاکہ ناروا سلوک کے ذمہ داروں کا تعین کرکے قانونی کارروائی کی جائے، ایسے واقعات کسی صورت برداشت نہیں کئے جاسکتے۔ نئے پاکستان میں پولیس کو اپنا روایتی رویہ بدلنا پڑے گا۔