عبدالعلیم خان9 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے


لاہور(24نیوز) تحریک انصاف کے رہنما عبدالعلیم خان کو9 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کےسنئیر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کو 9 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کےحوالےکردیا گیا، 15فروری کو دوبارہ پیش کرنے کاحکم دیا گیا،تحریک انصاف کے سابق سنئیر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کو آج احتساب عدالت میں پیش  کیا گیا، احتساب عدالت کے جج نجم الحسن کیس کی سماعت  کی، نیب کی جانب سے 15روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی،جس پر احتساب عدالت نےان کا 15 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہو ئے نیب کے حوالے کردیا۔

بعد ازاں نیب ٹیم نےعلیم خان کو واپس ہیڈکوارٹر منتقل کردیا، عدالت میں پیشی کے موقع پر  پی ٹی آئی کارکنوں  نےعدالت کےباہر نعرےبازی بھی کی، واضح رہے کہ نیب نے گزشتہ روز عبدالعلیم خان کو آف شور کمپنی کیس میں طلب کیا اور پانامہ کیس میں آمدن سے زائد اثاثے بنانے پر گرفتارکیا گیا،علیم خان کی جانب سےمبینہ طور پر پارک ویو کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کےسیکرٹری اورممبرصوبائی اسمبلی کے طور پر اختیارات کاناجائزاستعمال کیا  گیا۔

 انہوں نےپاکستان اوربیرون ملک میں آمدن سےزائداثاثے بنائے ،ریئل سٹیٹ بزنس سے لاہورکےمضافات پراپنی کمپنی میسرز اےاینڈاے پرائیویٹ لمیٹڈکےنام 900کنال زمین خریدی جبکہ 600کنال زمین کیلئےبیانہ رقم بھی اداکی۔

 نیب لاہور کے مطابق علیم خان نےمبینہ طورپر 2005اور2006 کےدوران متحدہ عرب امارات اوربرطانیہ میں آف شورکمپنیاں قائم کیں، نیب  کی جانب سے ریکارڈ میں مبینہ ردبدل کےپیش نظرگرفتاری عمل میں لائی گئی۔