قرض لینےکی دوڑ، پی ٹی آئی ن لیگ سےآگے نکل گئی

قرض لینےکی دوڑ، پی ٹی آئی ن لیگ سےآگے نکل گئی


اسلام آباد ( 24 نیوز ) پی ٹی آئی نےنیا قرض لینے میں ن لیگ کوبھی پیچھے چھوڑدیا، وفاقی حکومت نے5ماہ میں اوسطا ہر ماہ 448 ارب روپے قرض لیا، مجموعی قرضے 264 کھرب 52 ارب روپے سے تجاوزکرگئے۔

 اسٹیٹ بینک کے مطابق رواں مالی سال کےپہلے5 ماہ کےدوران وفاقی حکومت کےقرضے 9.3 فیصد بڑھ گئے،  نومبر کے اختتام تک وفاقی حکومت کے قرضوں کا مجموعی حجم 264 کھرب 52 ارب 60 کروڑ روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا،  اس دوران اندرونی قرضے 5.5 فیصد اضافہ سے 173 کھرب 22 ارب 80 کروڑ روپے اور بیرونی قرضے 17 فیصد اضافے سے 91 کھرب 29 ارب 80 کروڑ روپے کے ہو گئے۔

جولائی سے نومبر تک وفاقی حکومت نے 9 کھرب 6 ارب 50 کروڑ روپے کے قرضے مقامی ذرائع سے لیےجبکہ بیرونی قرضوں میں 13 کھرب 34 ارب روپے کا اضافہ ہوا،  پی ٹی آئی کی حکومت کی قرض لینے کی رفتار مسلم لیگ ن کی حکومت کی طرف سے آخری سال قرض لینے کی اوسط رفتار سے بھی 56 فیصد زیادہ ہے۔

یاد رہے وفاقی حکومت نےہرماہ اوسطاً448ارب روپے قرض لیاجبکہ   ن لیگ نے اپنے آخری مالی سال میں اوسطا ہر ماہ 287 ارب روپے قرض لیا تھا۔