راولپنڈی کینٹ، دہشت گردوں کاپولیس پر حملہ

راولپنڈی کینٹ، دہشت گردوں کاپولیس پر حملہ


راولپنڈی(24 نیوز) کینٹ کے علاقے میں دہشتگردوں نے پولیس پرحملہ کردیا۔ جس میں دو پولیس اہلکار شہید ہوگئے۔ایک دہشت گرد بھی مارا گیا ، ڈولفن فورس کےاہلکار اور خاتون سمیت3شہری زخمی ہوگئے۔ ذرائع کے مطابق مارے جانے والا دہشتگرد قصور کا رہائشی ہے۔

دہشت گردی کا واقعہ تھانہ کینٹ کے علاقے بینک روڈ اور مری روڈ کے کنارے پر پیش آیا جہاں مسلح حملہ آوروں نے پولیس ناکے پر کھڑے پولیس عملے پر پے درپے فائرنگ شروع کردی۔ فائرنگ اس قدر شدید اور اچانک تھی کہ پولیس اہلکاروں کو سنبھلنے کا موقع بھی نہ ملا اور ڈیوٹی پر کھڑے ہیڈ کانسٹیبل محمد علی اور کانسٹیبل سعید موقع پر ہی شہید ہوگئے جبکہ سمیرا نامی خاتون، ڈھول بجانے والا محنت کش محسن اور راہ گیر ابوبکر زخمی ہوگئے۔

گشت پر موجود ڈولفن فورس کی ایک فارمیشن نے فائرنگ کی آوازیں سن کر وہاں سے فرار ہوتے ہوئے ایک مسلح حملہ آور کا تعاقب کیا۔ اس دوران کراس فاٰئرنگ میں ایک دہشت گرد ہلاک ہوگیا جس کی شناخت آفتاب کے نام سے ہوئی ہے جبکہ حسن اکرم نامی ڈولفن اہلکار سینے میں گولی لگنے سے شدید زخمی ہوا۔ زخمیوں کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

اطلاع ملتے ہی آر پی او راولپنڈی سہیل تاجک، سی پی او راولپنڈی احسن یونس موقع پر پہنچے اور فرانزک ایکسپرٹ و کاونٹر ٹیرازم ڈیپارٹمٹ کے عملے کو طلب کیا جس نے شواہد جمع کرائے، ا واقعہ کے فوری بعد میڑو بس آپریشن بھی کچھ وقت کے لیے روک دیا گیا جسکو بعدازاں بحال کردیا گیا۔

ذرائع کے مطابق مارے جانےوالا دہشت گرد آفتاب قصور کا رہائشی ہے۔ ذرائع کے مطابق ہلاک ہونے والا دہشتگرد سیالکوٹ آپریشن میں مارے جانے والے چار دہشتگردوں کا ساتھی تھا۔ شہید ہونے والے اہلکاروں میں محمد علی گوجر خان اور سعید احمد چونترہ کا رہائشی تھا، دونوں شہید اہلکار شددی شدہ تھے۔

آر پی او راولپنڈی کا صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پولیس کی جوابی فائر نگ سے ہلاک ہونے والا حملہ آور بظاہر انتہائی تربیت یافتہ لگتا ہےخیال ہے کہ ہلاک ہونے والا میٹرو اسٹیشن کو نشانہ بنانا چاہتا تھا ج ایک سینیر پولیس اہلکار کے مطابق میڑو کے حوالے سے تھریٹس موجود تھیں جسکی بناء پر سیکورٹی انتہائی فول پروف رکھی گئی تھی۔

Malik Sultan Awan

Content Writer