نہال ہاشمی کے وکیل نے ہاتھ کھڑے کر دیئے، کیس کا دفاع کرنے سے معذرت


اسلام آباد (24نیوز) نہال ہاشمی کے وکیل بھی نہال ہاشمی سے نالاں، نہال ہاشمی کا کیس لڑنے سے معذرت کرتے ہوئے وکالت نامہ وآپس لینے کا فیصلہ کرلیا۔

سینئر وکیل اور پاکستان بار کونسل کے حال میں وائس چیئرمین منتخب ہونے والے کامران مرتضیٰ نے نہال ہاشمی کا دفاع کرنے سے معذرت کرلی اور اپنا وکالات نامہ واپس لینے کا اعلان کردیا۔ نہال ہاشمی کی جانب سے اعلیٰ عدلیہ کے ججز کو گالیاں نکالنے کی ویڈیو وائرل ہونے کے معاملے پر سپریم کورٹ کی جانب سے ایک بار پھر ایکشن لے جانے کے بعد ان کے وکیل اور پاکستان بار کونسل کے حال میں منتخب ہونے والے وائس چیئرمین کامران مرتضیٰ نے ان کی وکالت سے معذرت کرلی۔ انہوں نے کہا کہ وہ نہال ہاشمی کی عدلیہ کو دی گئی گالیوں کا دفاع نہیں کرسکتے ، وہ آج عدالت میں اپنا وکالت نامہ واپس لے لیں گے۔

یہ بھی پڑھئے: نواز شریف نے عمران خان کو بڑی پیشکش کردی 

 کامران مرتضیٰ نے کہا کہ وہ اپنے الیکشن میں اتنے مصروف تھے کہ نہال ہاشمی کی جانب سے ججز کو نکالی جانے والی گالیوں کی ویڈیو نہیں دیکھ سکے۔ انہیں عدالت میں جا کر معلوم ہوا اس لیے وہ ان کی وکالت سے دستبردار ہو رہے ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سپریم کورٹ میں نہال ہاشمی کی سزا کے خلاف نظر ثانی اپیل کی سماعت ہوئی۔  چیف جسٹس نے جیل سے رہائی کے بعد نہال ہاشمی کی میڈیا سےگفتگو میں عدلیہ سے متعلق بیان پر سخت برہمی کا اظہار کیا۔ چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ نہال ہاشمی نے رہائی کے بعد ججز کو گالیاں دیں، کیوں نہ ان کی سزا میں اضافہ کیا جائے۔