اسحاق ڈار کی کرپشن کی ںذر ہونے والے نئے منصوبے سامنے آ گئے


 لاہو(24نیوز) نیب نے اسحاق ڈار اورممبرپالیسی بورڈایس ای سی پی عثمان سیف اللہ خان کیخلاف تحقیقات کا فیصلہ کرلیا۔ ملتان سکھر موٹروے ٹھیکے میں مبینہ کرپشن اورپنجاب بینک انتظامیہ کیخلاف بھی تحقیقات کا فیصلہ کرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق چیرمین نیب نے اسحاق ڈار اورممبرپالیسی بورڈ ایس ای سی پی عثمان سیف اللہ خان کے خلاف مبینہ طور پر ایس ای سی پی میں غیرقانونی تقرریوں کی بنیاد پر شکایت کی جانچ پڑتال کا حکم دے دیا۔

یہ پھی پڑھیں۔نیب سندھ افسروں پر کرپشن میں ملوث ہونے کا الزام
 
چیرمین نیب نے نیشنل ہائی وے اتھارٹی کی طرف سے ملتان سکھر موٹروے کے ٹھیکے میں مبینہ طور پر اربوں روپے کی بے ضابطگیوں اور گوجرانوالا سے رکن پنجاب اسمبلی سہیل ظفر کے خلاف مبینہ طور پر آمدن سے زائد اثاثوں کی شکایت کی جانچ پڑتال کرنے کا حکم بھی دے دیا۔

راولپنڈی نیب نے حصص میں ہیرا پھیری اور قومی خزانے کو نقصان پہنچانے پر بینک آف پنجاب کے افسران کے خلاف انکوائری شروع کردی اور مضاربہ کیس میں بدعنوانی میں ملوث مفرورعبدالحمید کوگرفتار کرلیا۔

یہ پھی پڑھیں۔آشیانہ کرپشن کیس: فواد حسن فواد نیب کے سوالوں کا جواب کیوں نہ دیا؟
 
چیرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کا کہناہےکہ تمام شکایات کی جانچ پڑتال مبینہ الزامات کی بنیاد پر شروع کی گئی ہیں جو کہ حتمی نہیں۔ متعلقہ افراد سے ان کا موقف معلوم کرنے کے بعد ہی قانون کے مطابق حتمی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔