ایسا پھل جسے دل سلام کرتا ہے،پاکستان میں کہاں پایا جاتا ہے؟

ایسا پھل جسے دل سلام کرتا ہے،پاکستان میں کہاں پایا جاتا ہے؟


کوئٹہ( 24نیوز )کہتے ہیں کہ دوسرے تمام پھل دل کو سلام کرتے ہیں مگر سیب ایسا پھل ہے جسے دل خود سلام کرتا ہے، قلات کا بیش بہا اور مشہور پھل سیب جو انسانی جسم میں موجود قوت مدافعت کو توانائی بخشتی ہے اور بڑھاپے کو روک دیتا ہے۔

قلات میں سینکڑوں ایکڑ زمین پر محیط سیب کے باغات پھیلے ہوئے ہیں اور یہاں دس سے زائد اقسام کی بہت ہی میٹھے سیب پائے جاتے ہیں جن میں ثمر ریڈ گاجا ٹاپ، سپر گالا منڈیل، گالا امری مشہدی کشمیری گولڈن اور کولو سیب شامل ہیں، قلات سے نکلنے والے سیب ملک کے مختلف فروٹ منڈیوں کراچی سکھر لاہور اسلام آباد فیصل آباد اور پشاور کی منڈیوں میں فروخت کے لیئے لے جایا جاتا ہے اور قلات کی سیب زیادہ میٹھے ہونے کی وجہ سے لوگ اسے بے حد پسند کرتے ہیں ۔

ملک کے ستر فیصد سیب کی ضروریات کو بلوچستان پورا کرتا ہے اور قلات کے 80 فیصد لوگ باغبانی کے پیشے سے وابستہ ہیں جبکہ سینکڑوں مزدوروں کی گھروں کے چولہے انہی سیب کی باغات سے جلتے ہیں،مگر بد قسمتی سے حکمرانوں کی عدم توجہی کے باعث یہاں کے زمیندار ہر سال کروڑوں روپے کا مقروض ہوجاتے ہیں۔

پڑھنا مت بھولیں:  پشاور: پولیو مہم کا آغاز کردیا گیا

ذمینداروں کا کہنا ہے کہ عین سیزن کے شروع ہوتے ہی حکومت ترکی ایران و دیگر ممالک سے سیب درآمد کرتی ہیں جسکے باعث فروٹ منڈی میں سیب کی قیمت یکدم گر جاتی ہے اور زمینداروں کو نا قابل تلافی نقصان کا سامنا کرنا پڑتا ہے، دوسری جانب موسمی تبدیلیوں کی وجہ سے معمول سے کم بارشیں ہونا اور ڈیمز نہ ہونے کی سبب بارش کا پانی ضائع ہو رہا ہے اور زہر زمین پانی کی سطح تیزی کے ساتھ گر رہا ہے زمینداروں نے حکومت سے اپیل کی ہے کہ وہ قلات کی سیب کو بین الاقوامی منڈیوں تک دسائی کے لیئے ضروری اقدامات کریں اور سیب کو بیماریوں اور کیڑوں سے محفوظ رکھنے کے لیئے دیگر ممالک سے اچھی ادویات منگوالیں تا کہ زمیندار اپنے سیب کی فصل کو نقصان سے بچا سکیں۔

اس جدید دور میں بھی قلات کے زمیندار وہی پرانی اور روایتی طریقہ سے با غبانی اور زمینداری کر رہے ہیں حکومت زراعت کی ترقی کے لیے زمینداروں کو جدید طرز زمینداری سے روشناس کرانے کے لیے اقدامات کرے تا کہ زراعت کے شعبہ میں ہماری پہچان ترققیاتی ممالک میں ہو۔