لاہور: داتا دربار کے باہر خود کش دھماکہ، 9 افراد شہید، 25 زخمی



لاہور( 24نیوز )لاہورپھر دہشت گردی کا نشانہ بن گیا۔  داتادربار کے باہرخودکش دھماکے میں 10 افراد شہید، 25 زخمی ہوگئے۔ شہدا میں 5پولیس اہلکاراور5شہری شامل ہیں۔آئی جی پنجاب نے تصدیق کردی۔ 

 رمضان کے مبارک مہینے میں بزدل دہشت گردوں نے لاہور پر پھر چھپ کر وار کیا۔ داتا دربار کے گیٹ نمبر2 پرخودکش بمبار نے ایلیٹ فورس کی گاڑی کو نشانہ بنایا ۔ خودکش حملہ آورکی عمر14سے16سال تھی۔جیکٹ دیسی ساختہ تھی۔بال بیرنگ کابھی استعمال کیاگیا۔

آئی جی پنجاب عارف نواز نے جائے وقوعہ پر کہاکہ خود کش حملہ آور نے داتا دربار کے باہر پولیس کو ٹارگٹ کیا۔7کلوکےقریب بارودی مواداستعمال کیاگیا۔خودکش حملہ آورکےجسمانی اعضاءمل گئے۔ ملوث عناصر کو جلد کیفرکردار تک پہنچائیں گے.

ڈپٹی کمشنرلاہورصالحہ سعیدنے بھی جائے وقوعہ کا دورہ کیا ۔میڈیا سے گفتگو میں کہاکہ دھماکا خودکش تھا۔تمام زخمیوں کومیواسپتال منتقل کردیاگیا۔سرکاری اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذکردی گئی ہے۔

ایلیٹ فورس کے اہلکار داتا دربار کے باہر فرائض انجام دے رہے تھے جنہیں صبح 8 بجکر 45 منٹ پر نشانہ بنایا گیا۔زخمیوں کو اسپتالوں میں طبی امداد دی جارہی ہے۔

ذرائع کاکہناتھاکہ پولیس کی بھاری نفری نے علاقے کو گھیر ےمیں لے لیا ہے، دھماکے کی نوعیت کا جائزہ لیا جارہا ہے، ریسکیو ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ چکی ہیں، امدادی کارروائیاں جاری ہیں9 زخمیوں کو میوہسپتال منتقل کردیا گیا ہے، ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی.