سلمان شہباز کی نیب طلبی کی اصل کہانی منظر عام پر آگئی


لاہور(24نیوز) سابق وزیراعلیٰ اور موجودہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے بیٹے کو نیب نے آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں طلب کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو( نیب ) نے شہبازشریف کے صاحبزادے سلمان شہباز کو بھی طلب کرلیا، سلمان شہباز کو10 اکتوبر کو پیش ہونے کی ہدایت کردی۔ سلمان شہبازکوآمدن سےزائداثاثوں کےکیس میں بلایاگیا، سلمان شہباز کو اپنے اثاثوں کی تفصیلات ساتھ لانے کی ہدایت بھی کی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق شہباز شریف نے دوران تفتیش نیب کو بتایا ہے کہ ہر قسم کے مالی معاملات سلمان شہباز دیکھتے ہیں جس کی بنا پر انھیں نیب نے طلب کیا ہے۔

واضح رہے کہ 5 اکتوبر کو  نیب نے شہباز شریف کو آشیانہ ہاؤسنگ سکینڈل میں گرفتار کیا ہے جس پر شریف خاندان اور لیگی کارکنوں کا کہنا ہے کہ ان کی گرفتاری کے پیچھے حکومت کی انتقامی کارروائی ہے۔

ایف بی آر ذرائع کے مطابق 1997 سے 2004 تک میاں شہباز شریف کے ٹیکس معاملات، بنک اکاؤنٹس، ظاہر کردہ اثاثہ جات کی تفصیلات نیب کے حوالے کردی گئی ہیں. اسی طرح نیب نے ایف بی آر سے سابق وزیر اعلی میاں شہباز شریف کی سال 2007 سے 2018 تک کے بنک اکاؤنٹس، املاک، گاڑیوں اور انکم ٹیکس گوشواروں کی تفصیلات بھی مانگی تھیں.

ذرائع کے مطابق نیب کی تحقیقاتی ٹیم ایف بی آر سے حاصل کردہ معلومات کی روشنی میں اس امر کا جائزہ لینا چاہتی ہے کہ بطور وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے اثاثہ جات میں کتنا اضافہ ہوا اور ذرائع آمدن کیا تھے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔