اسپتالوں کی نجکاری کے خلاف ڈاکٹرز سراپا احتجاج، مریض رل گئے

 اسپتالوں کی نجکاری کے خلاف ڈاکٹرز سراپا احتجاج، مریض رل گئے


لاہور(24 نیوز) اسپتالوں کی نجکاری کیخلاف ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کی جانب سےمختلف شہروں میں احتجاج کیاگیا۔ پشاور، لاہور اور ملتان میں اسپتالوں کی اوپی ڈیز بندکردی گئیں۔

ٹیچنگ اسپتالوں کی نجکاری کیخلاف گرینڈہیلتھ الائنس کی جانب سےملتان کےنشتر اسپتال میں ہڑتال کی گئی۔ ڈاکٹرز اورپیرامیڈکس اسٹاف نےآؤٹ ڈوربندکردیا، آؤٹ ڈوربندہونےسےمریضوں کی شدیدمشکلات کاسامنارہا۔

لاہورکےجناح اسپتال میں بھی گرینڈہیلتھ الائنس نےاوپی ڈی بندکردی۔ ینگ ڈاکٹرز،نرسز،  پیرامیڈیکس اسٹاف نے احتجاج کیا۔ مریض در درکی ٹھوکریں کھانےپرمجبورہوگئے۔

لاہورمیں سول سیکرٹیریٹ کےباہرمحکمہ صحت کےکنٹریکٹ ملازمین نے دوسرے روزبھی دھرنا جاری رکھا۔ مظاہرین نےکہاپانچ سال سےیہی مطالبہ ہےکہ انہیں مستقل کیا جائے۔ نئی بھرتیاں، سروس اسٹرکچرمیں تبدیلی اورترقیاں نہ ملنے پرلیڈی ہیلتھ سپروائزرایسوسی ایشن پنجاب بھی سراپا احتجاج ہے۔ لیڈی ہیلتھ ورکرزکی جانب سےڈینگی مہم کےبائیکاٹ کی دھمکی دےدی گئی۔

ملتان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عہدیداروں نےکہاکہ مطالبات پورےنہ ہوئےتوبنی گالاکاگھیراؤ کریں گے۔ ہری پورمیں بھی محکمہ صحت کےملازمین نے احتجاج کیا۔ہڑتال کےباعث بچوں کوحفاظتی ٹیکےبھی نہ لگ سکے۔ خیبرپختونخوا میں بھی ڈاکٹرسراپااحتجاج ہیں، سرکاری اسپتالوں کی او پی ڈیز بند ہیں، مریض خوار ہورہے ہیں۔

Malik Sultan Awan

Content Writer