جگر کے مرض میں مبتلا طالب علم مسیحا کا منتظر

11:23 AM, 8 Sep, 2018

منڈی بہاؤالدین  (24 نیوز) پھالیہ کے طالب علم کی سانسیں جگر کے ہاتھوں اکھڑنے لگیں، ڈاکٹرز نے جگر ٹرانسپلانٹیشن کیلئے ایک کروڑ روپے مانگ لیے، اہل خانہ نے وزیراعظم سے بچے کےعلاج کی اپیل کردی۔

تفصیلات کے مطابق ضلع منڈی بہاؤالدین کی تحصیل پھالیہ کے گاؤں چوٹ دھیراں کا غریب محنت کش غلام سرور جس کا 14 سالہ بیٹا ساتویں کلاس کا طالب علم عادل عباس  جگرکےمرض میں مبتلا ہے، معاشی مشکلات ہونے کی وجہ سے اہل خانہ اپنے لختِ جگر کے علاج سے متعلق پریشانی کا شکارہیں۔ غریب طالب علم علاج کیلئے کسی مسیحا کی راہ دیکھ رہا ہے۔

تقریباً دو ماہ قبل غلام سرور اپنے لختِ جگرکا بےنظیر بھٹو شہید ہسپتال راولپنڈی میں علاج کرواتا رہا، میڈیکل رپورٹس آ نے کے بعد ڈاکٹرز نے بتایا کہ عادل کے علاج پر ایک کروڑ روپے خرچہ آئے گا۔

غریب غلام سرور بیٹے کو ہسپتال سے اٹھا کر گھر لے آیا جہاں پر وہ موت و حیات کی کشمکش میں مبتلا زندگی کی سانسیں گن رہا ہے، عادل عباس کے اہل خانہ نے وزیراعظم عمران خان سے اپیل کی ہے کہ وزیراعظم انکے بچے کا علاج کرائیں۔

 

مزیدخبریں