چیف سیکریٹری کی تعیناتی کا معاملہ، وفاق اور سندھ حکومت میں سرد جنگ چھڑ گئی

چیف سیکریٹری کی تعیناتی کا معاملہ، وفاق اور سندھ حکومت میں سرد جنگ چھڑ گئی


کراچی ( 24 نیوز ) سندھ حکومت نے نگران حکومت کے تعینات چیف سیکریٹری سندھ اعظم سلیمان کی خدمات برقرار نہ رکھنے پر ڈٹ گئی، وفاقی حکومت کے نئے چیف سیکریٹری کیلئے تجویز کردہ 22 گریڈ کے تینوں افسران کے نام مسترد کردیئے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ  نے وفاقی حکومت کی جانب سے سندھ کے چیف سیکریٹری کیلئے تجویز کردہ تینوں ناموں کو مسترد کرکے 18 ویں آئینی ترامیم کی خلاف ورزی قرار دے دیا ہے۔ وفاقی حکومت نے سات ستمبر کو سندھ کے نئے چیف سیکریٹری کیلئے 22 گریڈ کے تین افسران محمد سہیل الطاف، سید ممتاز علی شاہ اور طاہر حسین کے نام تجویز کیئے تھے۔

سندھ حکومت نے موقف اختیار کیا ہے کہ تجویز یا سفارش کرنے کا اختیار سندھ حکومت کے پاس ہے، سندھ حکومت نے وفاقی حکومت کی تجویز کو ڈکٹیشن قرار دیکر نگران سرکار کے تعینات چیف سیکریٹری اعظم سلیمان کی خدمات برقرار رکھنے سے بھی صاف انکار کردیا۔   

سندھ حکومت  نے نئے چیف سیکریٹری سندھ کیلئے مختلف ناموں پر غور شروع کردیا ہے، ان افسران میں سابق چیف سیکریٹری سندھ رضوان میمن، محمد وسیم سہیل راجپوت اور علم الدین بلو کے نام سر فہرست ہیں۔ سندھ سرکار ان ناموں کو شارٹ لسٹ کرکے تین نام وفاقی حکومت کو ارسال کرے گی۔