بھارتی فوج کی بربریت،مقبوضہ وادی کا بیرونی دنیاسے رابطہ منقطع

بھارتی فوج کی بربریت،مقبوضہ وادی کا بیرونی دنیاسے رابطہ منقطع


سری نگر( 24نیوز )مقبوضہ کشمیرکی حیثیت تبدیل کرنے کےبعد آج پہلا جمعہ ہے، 900سےزائد کشمیری رہنما گرفتار اور نظر بند ہیں، وادی میں5روزسےانٹرنیٹ اورموبائل سروس بھی بند ہے۔

تفصیلات کےمطابق قابض بھارتی فوج نے نہتے کشمیریوں پر جبروتشدد کے پہاڑ توڑ دیے،مقبوضہ کشمیرکی حیثیت تبدیل کرنے کےبعد آج پہلا جمعہ ہے، مقبوضہ کشمیر میں ہر پانچ فٹ کے فاصلے پر بھارتی فوجی کھڑا ہے، نماز جمعہ کے روز بھی کشمیری گھروں میں قید ہیں،جامعہ مسجد سری نگر کے اطراف رکاوٹیں کھڑی کر دی گئیں ہیں، 560 کشمیری رہنما وں کو گرفتار اور نظر بند ہیں، وادی میں انٹرنٹ اور موبائل سروس کو بند ہوئے بھی 5واں روز ہے۔

ذرائع کا کہناتھا کہ وادی کا بیرونی دنیا سے کوئی رابطہ نہیں،کشمیریوں کو اشیائے خورنوش کی قلت کا سامنا ہے اور بیماروں کو ادویات کی فراہمی منقطع ہو چکی ہے، بھارتی فوج نے 30 کشمیریوں کو انتہائی سخت سیکورٹی کے حصار میں آگرہ جیل منتقل کیا گیا ہے،کشمیری نوجوان ٹولیوں کی شکل میں بھارتی فوج پر پتھراو کر رہے ہیں۔