واٹر کمیشن کے سربراہ سکھر پہنچ گئے,گندے پانی کی فراہمی،افسران پربرس پڑے

واٹر کمیشن کے سربراہ سکھر پہنچ گئے,گندے پانی کی فراہمی،افسران پربرس پڑے


سکھر (24نیوز) سپریم کورٹ کے واٹر کمیشن کے سربراہ سکھر پہنچ گئے، شہر کی مختلف واٹر سپلائی اسکیموں، پانی کے تالابوں کا معائنہ کیا، شہریوں کو گندے پانی کی فراہمی پرافسران اور میئر پر برس پڑے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کی جانب سے سندھ میں شہریوں کو سپلائی کیے جانے والےپانی کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے تشکیل دیئے گئے واٹر کمیشن کے سربراہ جسٹس ریٹائرڈ امیر ہانی مسلم نے سکھر پہنچ کر مختلف واٹر سپلائی اسکیموں کا دورہ کیا اور پانی کےتالابوں کا معائنہ کیا۔ سکھر کو مین سپلائی کرنے والی واٹر سپلائی اسکیم کے دورے پر پانی کے تالابوں کی صورتحال پر سخت برہمی کا اظہار کیا اور اور وہاں پرموجود میئر سکھر ارسلان شیخ اور ضلعی انتظامیہ کے افسران پر برس پڑے۔کہا کہ جب تک یہ پانی آپ کے اور ہمارے پینے کے لائق نہیں ہوجاتا اس وقت تک تو پانی شہریوں کوفراہم نہ کیا جائے۔

واضح رہے کہ واٹر کمیشن سربراہ نے پانی کی ٹیسٹنگ لیبارٹری کا دورہ بھی کیا اور اس کی صورتحال پر بھی ناگواری کا اظہار کیا۔میئر سکھر سے کہا کہ ٹیکنکل اسٹاف کی کمی ہے کیوں؟ جس پر میئر سکھر نے کہا کہ کوئی ٹیکنیکل اسٹاف دینے کے لیے تیار نہیں جس پر واٹر کمیشن کے سربراہ نے کہا کہ وہ میئر ہیں اور میئر بنیں۔