معمولی اور موسمی فلو کو بھی نظر انداز نہ کیا جائے:طبی ماہرین

معمولی اور موسمی فلو کو بھی نظر انداز نہ کیا جائے:طبی ماہرین


اسلام آباد(24نیوز) پاکستان میں سوائن فلو ایک بار پھر زور پکڑنے لگا ، یہ مرض ملک میں اب وبا کی صورت اختیار کرتا جارہا ہے، بچائو کیلئے ضروری ہے کہ عام فلو کو بھی نظر انداز نہ کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سوائن فلو 2009 میں میکسیکو سے پاکستان میں داخل ہوا میکسکو سے سر اٹھانے والی یہ جان لیوا بیماری اب تک سیکڑوں افراد کی جان لے چکی ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق چند احتیاطی تدابیر اختیار کرکے اس موذی مرض کے خلاف مدافعت بڑھائی جاسکتی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ عوام سوائن فلو کی علامات سے متعلق آگاہی حاصل کریں۔  علامات ظاہر ہونے پر متاثرہ شخص کو ورزش کرنی اور گہرے سانس لینا چاہئیں، غذا میں میٹھے کا استعمال ترک کردیا جائے، مریض زیادہ نیند اور دھوپ لے، وٹامنز کے استعمال سے مرض کی شدت کمی ہوتی ہے۔جبکہ مرض میں مبتلا شخص کےچھینکنے اور کھانسنے سے وائرس منتقل ہوتا ہے۔

طبی ماہرین کا مزید کہنا ہے کہ سانس کی نالی میں تکلیف، کھانسی،چھینکیں،قے،جسم میں درد بنیادی سوائن فلو کی بنیادی علامات ہے۔ لوگوں کو چاہئے کہ فلو کی علامات کو نظر انداز نہ کریں جتنی جلد ہوسکے ڈاکٹر سے رابطہ کرکے تشخیص کرائیں۔