آج دوست ،دشمن مل بیٹھیں گے

آج دوست ،دشمن مل بیٹھیں گے


ماسکو( 24نیوز )روس میں ہونے والے افغان امن مذاکرات میں امریکا نے بھی شرکت کی تصدیق کر دی ہے، آج ہونے والی امن کانفرنس میں طالبان کا وفد بھی شرکت کرے گا۔
امریکی محکمہ خارجہ کے نائب ترجمان کے مطابق روس میں افغان امن مذاکرات میں ماسکو میں موجود امریکی سفارت کار شرکت کریں گے،نائب ترجمان کا کہنا تھا کہ افغان حکومت اور طالبان کے مذاکرات کرانے کے لیے تمام ممالک کو تعاون کرنا چاہیے، طالبان سے براہ راست مذاکرات میں افغان حکومت کا متبادل کوئی اور نہیں ہوسکتا۔
روسی میڈیا کے مطابق ماسکو میں افغان امن مذاکرات میں پاکستان اور چین سمیت 12ممالک کو مدعو کیا گیا ہے، افغان حکومت مذاکرات میں شرکت نہیں کر رہی، تاہم افغان امن کونسل کا وفد آزادانہ حیثیت میں کانفرنس میں شریک ہوگا۔
یاد رہے ترجمان افغان طالبان ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا تھا کہ قطر میں قائم طالبان دفتر کا اعلیٰ سطحی وفد اجلاس میں شرکت کے لیے روس کے دارالحکومت جائے گا، مجاہد نے اِس بات پر زور دیا کہ کانفرنس کا مقصد کسی مخصوص فریق سے مذاکرات کرنا نہیں ہے بلکہ اجلاس میں افغان بحران کا مربوط پرامن حل تلاش کرنا اور امریکی قبضہ خالی کرانا ہے۔


دوسری جانب نیٹو کے سیکریٹری جنرل جینس اسٹول غیراعلانیہ دورے پر افغانستان پہنچے اور افغان صدر اشرف غنی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں امن کے قیام کا جتنا بہتر موقع آج میسر ہے، اس سے پہلے کبھی نہیں تھا ،،اسٹول ٹنبرگ نے طالبان سے جنگ ختم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے مزید کہا کہ طالبان کو یہ سمجھنا چاہیے کہ اب مزید لڑائی جاری رکھنا فضول اور اس کا کوئی نتیجہ نہیں نکلے گا۔