افغان جنگ میں امریکی عوام سے مسلسل جھوٹ بولا جارہا ہے: نیو یارک ٹائمز کا انکشاف

افغان جنگ میں امریکی عوام سے مسلسل جھوٹ بولا جارہا ہے: نیو یارک ٹائمز کا انکشاف


واشنگٹن(24نیوز) معروف امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق امریکی حکومت افغان جنگ پر مسلسل جھوٹ بول رہی ہے ۔

نیویارک ٹائمز نے انکشاف کیا ہے کہ امریکی حکومت افغانستان میں اپنی 17 برس جنگ کے حق میں عوامی حمایت حاصل کرنے کے لیے مسلسل ناقص اعدادوشمار پیش کررہی ہے۔رپورٹ کے مطابق نیویارک ٹائمز کی اپنی تحقیق اور امریکی حکومت کو عالمی ایجنسیوں سے ملنے والے اعداد وشمار سے واضح ہوتا ہے کہ واشنگٹن امریکی عوام کو افغانستان کے حالات سے متعلق سچ بتانا نہیں چاہتا۔ 
امریکی حکومت کہتی ہے کہ طالبان کو افغانستان کے 44 فیصد اضلاع میں کنٹرول حاصل ہے جبکہ نیویارک ٹائمز کا دعویٰ ہے کہ جنگجوؤں کو دراصل 61 فیصد علاقے میں مکمل اثر ورسوخ حاصل ہے۔ رپورٹ کے مطابق تقریباً 2 ہزار 200 امریکی افغان جنگ میں ہلاک ہو چکے ہیں اور واشنگٹن 40 ارب ڈالر سے زیادہ کی رقم لگا چکا ہے۔

رپورٹ کے مطابق افغان جنگ مہنگی ترین جنگ ثابت ہورہی ہے، امریکی عوام سے جھوٹ بولا جارہا ہے کہ طالبان کمزور ہورہے ہیں، نیویارک ٹائمز کا دعویٰ ہے کہ متعدد اضلاع میں افغان حکومت صرف ضلعی ہیڈ کواٹر اور ملٹری بیس پر کنٹرول رکھتی ہے جبکہ طالبان دیگر انصرام سنبھالتے ہیں.

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔