لوک ادب کے شہنشاہ محمد لقمان کھوکر بیمار، حکومت سے امداد کی اپیل

لوک ادب کے شہنشاہ محمد لقمان کھوکر بیمار، حکومت سے امداد کی اپیل


لاڑکانہ(24نیوز) لوک ادب کے شہنشاہ 12 کتابوں کے خالق اور 200 سے زائد ایوارڈ حاصل کرنے والے گولڈ میڈلسٹ محمد لقمان کھوکھر جگر اور گردے کی بیماری میں مبتلا ہوکر بیماری کے بستر تک محدود ہوگئے ہیں، محکمہ ثقافت نے بھی محمد لقمان کھوکھر کو نظر انداز کردیا ہے۔

سندھ کی تاریخ میں اگر لوک ادب کا نام لیا جائے تو لوک ادب کے بادشاہ استاد جلال کھٹی اور محمد ملوک عباسی کے بعد لوک ادب کے شہنشاہ محمد لقمان کھوکھر کا نام آتا ہے۔ محمد لقمان کھوکھر نے مختلف ادبی کانفرنس میں حضرت قلندر لعل شہباز، حضرت سچل سرمست، شاہ عبدالطیف بھٹائی، علامہ اقبال سمیت 200 سے زائد ایوارڈ حاصل کئے۔

سندھ کی تاریخ میں یہ وہ واحد شخص ہیں جس نے لوک ادب میں گولڈ میڈل حاصل کیا ہے محمد لقمان کھوکھر نے سندھی اور سرائیکی لوک ادب میں 12 کتابیں لکھی ہیں  جن میں لاتیوں سن لقمان جوں،  لال کناں لقمان جا ، لوچوں ڈس لقمان جوں لقمان لباں پہ تیڈا نالا اور دیگر کتاب شامل ہیں۔ ایک کتاب محکمہ ثقافت کی جانب سے 400 صفحات پر مشتمل لوک رنگ لقمان جا بھی پبلش کیا جس کتاب کے دو ایڈیشن نکالے گئے مگر اس کتاب کی ڈمانڈ بڑھ جانے سے وہ کتاب آج بھی مارکیٹ میں دستیاب نہیں ہے ۔

ہندوستان سے شملہ معاہدے کے تحت 90 ہزار پاکستانی قیدی رہا کرنے پر محمد لقمان کھوکھر نے شہید ذوالفقار علی بھٹو کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے ایک کتاب منھں متھاھاں جن جا لکھا جس کتاب پر شہید ذوالفقار علی بھٹو نے اپنے پیغام میں محمد لقمان کھوکھر کا شکریہ بھی ادا کیا ۔ محمد لقمان کھوکھر نے اپنے بیٹے بلاول کھوکھر کی نوکری کی بحالی کے لئے لاڑکانہ کے ایک تقریب میں شہید محترمہ بے نظیر بھٹو کے سامنے ایک شاعری پیش کی جس میں اس نے محترمہ بے نظیر بھٹو سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ اپنے بلاول کے صدقے میرے بلاول کی سن لو جس پر شہید محترمہ بے نظیر بھٹو نے نہ صرف اس کے بیٹے بلاول کھوکھر کی نوکری بحال کی بلکہ 30 ہزار روپے بطور انعام بھی دیا ۔لقمان کھوکھر کو محکمہ ثقافت کی جانب سے سالانہ وظیفہ 60 ہزار روپے مقرر ہیں کرپشن کی وجہ سے کٹوتی کرکے 30 ہزار روپے دیئے جاتے ہیں ۔

ضرورت اس بات کی ہے کہ حکومت سندھ کو چاہئے کہ لوک ادب کے شہنشاہ محمد لقمان کھوکھر کا علاج سرکاری خرچے پر کرانے کے ساتھ ساتھ سالانہ وظیفہ بغیر کسی کٹوتی کے 60 ہزار روپے سے بڑھا کر ایک لاکھ روپے مقرر کیا جائے تاکہ وہ اپنی کفالت بہتر طریقے سے کر سکے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔