کراچی: غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا مسئلہ جوں کا توں، نیپرا وفد کی آمد بے سود

کراچی: غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا مسئلہ جوں کا توں، نیپرا وفد کی آمد بے سود


کراچی (24نیوز) غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا مسئلہ حل نہ ہوا۔ نیپراوفد کی کراچی آمد بھی بے سود ثابت ہوئی۔ شہرکے بیشتر علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 12 گھنٹوں تک پہنچ گیا۔

تفصیلات کے مطابق روشنیوں کے شہر میں بجلی نایاب بجلی کی بندش کا عذاب کراچی والوں کا مقدر بن گیا۔ کروڑ سے زائد آبادی والا شہر   لوڈشیڈنگ کی زدہ پر رہنے لگا غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ سے شہریوں کی معمولات زندگی متاثر ہونے لگی۔لیاقت آباد ، شاہ فیصل کالونی ، ملیر ، اورنگی میں بارہ بارہ گھنٹوں کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔

جبکہ فیڈل بی ایریا کے بلاکز اورا ورنگی سمیت دیگر علاقوں میں صورتحال کچھ مختلف نہیں۔ بجلی کی بندش سے کارروباری حضرات سے لیکر عام شہری عاجز دیکھائی دیتا ہے۔ادھر کراچی میں نیپر کے وفد کی آمد مگر نیپرا کی کے الیکڑک کےنمائندگان سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی۔ بلکہ میڈیا کی الٹا دوریں لگ گئیں۔ نیپراکا5رکنی وفد 3 روزہ دورہ پر بدھ کو کراچی پہنچا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:کراچی کو غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے چھٹکارا دلانے کیلئے ’نیپرا‘ کا بڑا اعلان
کراچی میں بجلی کے بحران پرسیاسی جماعتیں بھی سیخ پاہوگئیں۔ پاک سرزمین پارٹی کاوفد کے الیکٹرک کے دفترپہنچ گیا۔ مجلس وحدت مسلمین نے بھی بجلی کی بندش پراحتجاج کیا۔ پی ٹی آئی اوراے این پی کے رہنماؤں نے نیپراسے ایکشن لینے کا مطالبہ کردیا۔