پشاور خود کش دھماکہ، ہارون بلور کی نماز جنازہ ادا، تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی تشکیل

پشاور خود کش دھماکہ، ہارون بلور کی نماز جنازہ ادا، تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی تشکیل


پشاور ( 24نیوز ) یکہ توت میں ہونے والے خود کش حملہ کے لیے جے آئی ٹی تشکیل دے دی گئی اور حملہ میں شہید ہونے والے بشیر بلور کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی۔

گزشتہ رات پشاور کے علاقہ یکہ توت میں دھماکہ  ہوا۔  جس وقت اے این پی کے رہنما اور صوبائی اسمبلی کے امیدوار ہارون بلور کی جانب سے کارنر میٹنگ جاری تھی۔ ابتدائی طور پر دھماکہ میں ہارون بلور سمیت 7 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات موصول ہوئیں۔ زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا گیا۔ ہسپتال میں ہارون بلور کا فوری طور پر آپریشن کرنے کا بتایا گیا لیکن بعد میں ملنے والی اطلاعات میں اس بات کی تصدیق  ہو گئی کہ ہارون بلور شہید ہو گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیؓں:بیٹے کو جیل نہیں جانے دوں گی،نواز شریف کی والدہ کا اعلان 

پولیس ذرائع کے مطابق دھماکہ یکہ توت میں ہوا جس میں ہارون بلور سمیت 20 افراد شہید ہوئے، کارنر میٹنگ میں300  کے قریب افراد موجود تھے۔ پارٹی رہنما شاہی سید کا کہنا ہے کہ ہمیں سکیورٹی نہیں دی گئی۔ یہاں تک کہ سکیورٹی کے لیے ایک اہلکار نہیں تھا۔ اگر سکیورٹی دی جاتی تو ایسا واقعہ پیش نہ آتا۔سی سی پی او پشاور قاضی جمیل کے مطابق بم ڈسپوزل سکواڈ نے دھماکہ خود کش بتایا ہے.

پڑھنا نہ بھولیں:پشاور: عوامی نیشنل پارٹی کی کارنر میٹنگ میں دھماکہ، ہارون بلور سمیت 20 افراد شہید 

جس میں 8 کلو ٹی این ٹی استعمال کیا گیا۔ جبکہ انھوں نے یہ بھی کہا  کہ ہارون بلور کی سکیورٹی پر دو اہلکار مامور تھے۔ آئی جی بم ڈسپوزل شفقت ملک کے مطابق دھماکہ کے لیے جو دھماکہ خیز مواد استعمال کیا گیا تھا وہ اچھے معیار کا تھا۔عوامی نیشنل پارٹی کی جانب سے سوھ کا اعلان کر دیا گیا ہے  . خود کش حملہ کے لیے جے آئی ٹی تشکیل دے دی گئی اور حملہ میں شہید ہونے والے بشیر بلور کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی۔

شازیہ بشیر

   Shazia Bashir   Edito