امریکی سکیورٹی حکام نے ایسا کونسا کام کیا کہ کینڈین وزیر سے معافی مانگنا پڑ گئی


(24نیوز)  سکھ کینڈین وزیر کی پگڑی اتروانے پر امریکی ہوم لینڈ سکیورٹی حکام کو کینیڈین وزیر سے معافی مانگنا پڑ گئی۔
کینیڈا کے سکھ وزیر نودیپ امریکی ریاست ڈیٹرائٹ کے ایئرپورٹ پر بغیر ڈپلومیٹک پاسپورٹ کے داخل ہوئے۔نودیپ ایئرپورٹ کے اندر تمام سیکورٹی مراحل سے ایک عام آدمی کی حیثیت سے گزرے، لیکن نودیپ کو پگڑی کی وجہ سے مختلف سیکورٹی چیک سے گزارا گیا، مشین خراب ہونے پر سیکورٹی افسر نے نودیپ کو پگڑی اتارنے کا کہا، نودیپ نے کہا پہلے تو انہیں کبھی ایسا کرنے کیلئے نہیں کہا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: ہوٹل میں دھماکہ، ایک ہی خاندان کے 5 دیے بجھ گئے

نودیپ کے اسرار پر انہیں جہاز پر سوار ہونے کی اجازت دے دی گئی، لیکن نودیپ ابھی بورڈنگ گیٹ کے قریب پہنچے ہی تھے کہ سیکورٹی افسر دوبارہ بلانے آگیا، اور انہیں دوبارہ پگڑی اتارنے کو کہا گیا۔
نودیپ نے سیکورٹی حکام الجھ پڑے کہا پہلے تو کبھی ایسا کوئی مسئلہ نہیں ہوا، پھر مجھے کیوں بار بار پگڑی اتارنے کو کہا جارہا ہے، جس پر سیکورٹی اہلکاروں نے نودیپ سے ان کا نام اور شناخت پوچھی،جب نودیپ نے اپنا سفارتی پاسپورٹ ان کو دکھایا، تو انہیں فوری طور پر جہاز پر سوار ہونے کی اجازت دے دی گئی۔
نیٹسبعد میں امریکی ہوم لینڈ سیکورٹی حکام کو کینیڈین وزیر سے اس طرز عمل پر باضابطہ معافی بھی مانگی گئی۔



وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔