منڈی بہاوالدین: 18روز قبل لاپتہ ہونے والا نویں جماعت کا طالبعلم بازیاب نہ ہو سکا،والدین کی وزیر اعلیٰ سے مدد کی اپیل

منڈی بہاوالدین: 18روز قبل لاپتہ ہونے والا نویں جماعت کا طالبعلم بازیاب نہ ہو سکا،والدین کی وزیر اعلیٰ سے مدد کی اپیل


منڈی بہاوالدین (24نیوز)تھانہ کٹھیالہ شیخاں کے علاقہ میانوال سے 18روز قبل لاپتہ ہونے والا نویں جماعت کا طالبعلم ذیشان تا حال بازیاب نہ ہو سکا ، پولیس کا روائیتی طریقہ تفتیش مغوی طالبعلم کے والد سے موبائل ڈیٹا نکلوانے کے لیے 3500بٹور لیے ، وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف بچے کی بازیابی میں مدد کریں مغوی طالبعلم کے والدین کی وزیر اعلیٰ سے اپیل کردی۔
تفصیلات کے مطابق منڈی بہاوالدین ۔تھانہ کٹھیالہ شیخاں کے علاقہ میانوال سے 18روز قبل گھر سے موبائل ٹھیک کروانے کی غرض سے جانے والا نویں جماعت کے طالبعلم زیشان کو نامعلوم افراد نے اغواءکر لیا پولیس تا حال مغوی طالبعلم کو بازیاب نہ کروا سکی مغوی ذیشان کی والدہ نے 24نیوز سے بات کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف سے مطالبہ کیا کہ میرے بیٹے کو بازیاب کروانے میں مدد کریں ۔
لاپتہ طالبعلم کی بہن نے کہا کہ میرا بھائی 18روز قبل اغوا ہوا ایف آئی آر درج ہونے کے باوجود پولیس ہماری کوئی مدد نہیں کر رہی ،مغوی طالبعلم زیشان کی بوڑھی دادی اماں نے بھی اپنے گرتے ہوئے آنسوو¿ں کے ساتھ بے بسی اور لاچاری کے ساتھ ارباب اختیار کی توجہ اپنی جانب مبذول کروانے کی کوشش کرتی دکھائی دیں ،نامعلوم اغوا کاروں کے ہاتھوں لاپتہ طالبعلم کے چچا نے کہا کہ ہمارا بچہ 18روز سے لاپتہ ہے جبکہ پولیس ہمیں بار بار کہتی ہے کہ بچہ خود بھاگ کر گیا ہے پولیس ہماری مدد نہیں کر رہی ۔
پنجاب پولیس کی وردی بدل گئی مگر روش نہ بدلی لاپتہ طالبعلم کا والد جب تھانہ کٹھیالہ شیخاں اندراج مقدمہ کے لیے پہنچا تو اس کی کسی نے نہ سنی دو دن تاخیر سے مقدمہ درج ہوا تو پولیس نے مغوی طالبعلم کے غریب باپ سے موبائل لوکیشن نکلوانے کی غرض سے 3500روپے رشوت بھی وصول کر لی پولیس ترجمان کٹھیالہ شیخاں پولیس کی غفلت کو چھپاتے ہوئے افسران کے گن گاتے دکھائی دیا ۔
اتنے دن گزر جانے کے باووجودمغوی طالبعلم زیشان کو بازیاب کروانے کے لیے پولیس نے کوئی کاروائی نہ کی کیونکہ پنجاب پولیس سانحہ قصور کی طرح ایکشن نہیں کرتی ہمیشہ ری ایکشن کرتی ہے اگر پولیس لاپتہ ہونے والے بچے بچیوں کو فوری طور پر بازیاب کروانے کے لیے کاروائی کرے تو قصور جیسے حالات ہی نہ پیدا ہوں ضلع منڈی بہاوالدین کی سیاسی و سماجی تنظیموں نے اعلان کیا کہ اگر طالبعلم زیشان کو بازیاب نہ کروایا گیا تو پورے ضلع میں پولیس کے خلاف بھر پور احتجاج کیا جائے گا جبکہ تھانہ کٹھیالہ شیخاں کے ترجمان نے غفلت کو چھپاتے ہوئے کہا کہ ہم نے زیشان کا مقدمہ فوری طور پر درج کر لیا تلاش کی جارہی ہے تھانہ کٹھیالہ شیخاں کا سب انسپکٹر روائیتی انداز میں افسران کے گن گاتے دکھائی دیا جبکہ مغوی زیشان کے اہلخانہ آج بھی اس کی کتابیں اور سکول یونیفارم رکھے اس کی راہیں دیکھ رہے ہیں۔