جج ہٹانے کا معاملہ،حکومت کا موقف بھی سامنے آگیا



اسلام آباد(24نیوز)وفاقی وزیر قانون بیرسٹر فروغ نسیم نے وزیر اعظم کے معاون بیرسٹر شہزاد اکبر کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ جج صاحب کہتے ہیں مجھے نہیں پتا کہ کیوں ان کو احتساب عدالت کا جج لگایا گیا,آج منی ٹریل دے دیں آج ہی چھٹکارا مل جائے گا,دیکھنا ہے 31 اے میں یہ معاملہ آتا ہے یا نہیں,فروغ نسیم جن لوگوں نے الزام لگائے ان کیخلاف نیب کاروائی کرے گی۔

فروغ نسیم نے کہا کہ نئے جج کی تعیناتی کو بعد میں دیکھیں گے, ابھی انکوائری ہونی ہے اس کے بعد باقی چیزیں دیکھیں گے, ارشد ملک کو جتنی لالچ دی گئی اس کے بعد میرٹ پر فیصلہ دینا بہت مشکل ہے، جتنی دولت نواز شریف خاندان نے بنائی اس کی منی ٹریل دینا ہوگی۔

جسٹس اعجازالاحسن مانیٹرنگ جج تھے مگر وہ ایک کیس تھا یہ الگ معاملہ ہے,نئے جج کی تعیناتی صاف شفاف اور میرٹ پر ہوگی۔

شہزاد اکبر نے کہا کہ پریس کانفرنس کرنے والوں کے خلاف نیب قانون کےتحت کارروائی ہو سکتی ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer