ایف بی آر تاجروں کو مطمئن کرنے میں ناکام

ایف بی آر تاجروں کو مطمئن کرنے میں ناکام


کراچی(24 نیوز) حکومت اور کاروباری حلقوں کے درمیان خلیج مزید بڑھنے لگی،  تاجرکل ملک گیر ہڑتال کرنے جارہےجبکہ ایف بی آر حکام انہیں مطمئن نہیں کرپارہے، دونوں کے موقف درست،آخر کونسی وجہ جوکشیدگی کا باعث بن رہی ہے؟ 

ایک طرف معیشت کا شبر، دوسری طرف تاجر، دونوں ایک دوسرے سے نالاں ، معیشیت کا ٹائی ٹینک ڈوب رہا ہے ،آخر چئیرمین ایف بی آر کاروباری حلقوں کو مطمئن کیوں نہیں کرپا رہے ؟ شبر  زیدی کہتے ہیں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا، چھاپے نہیں ماریں گے، کسی کو ہراساں نہیں کیا جائے گا، تاجر طبقے کو ساتھ لیکر چلیں گے۔ ایک طرف تاجر سخت ناراض ،ملک گیر ہڑتال کا اعلان کرچکے،تاجرباربار کہہ رہے شبر انہیں لالی پاپ دے رہے ہیں۔

شہر قائد میں آپ نے دیکھا تاجروں اور شبر کے درمیان چپقلش بھی ہوئی تھی، تاجروں نے بہت ساری باتیں چئیرمین کے منہ پر سنائیں تھیں۔ آخر وہ کونسی بات ہے یا مطالبہ، جس پر حکومت اور تاجروں کے درمیان بن نہیں پا رہی، وزیر اعظم،ایف بی آر، ریونیو، وزارت خزانہ اور کاروباری حلقوں میں پیدا ہونیوالی خلیج ختم کیوں نہیں ہورہی، احتجاجوں،مظاہروں، ہڑتالوں سے روزانہ اربوں کے نقصان ہورہے ہیں۔ ملک ایسے نہیں چلتے،حکومتیں ایسی نہیں چلتیں،سب کو ساتھ لیکر چلنا پڑتا ہے۔

Malik Sultan Awan

Content Writer