"مڈٹرم الیکشن کے حق میں نہیں ہیں "


سکھر(24نیوز)  پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ نےکہاکہ حکومت میں اہلیت کا فقدان ہے لیکن مڈٹرم الیکشن کے حق میں نہیں ، بلاول اور مرادعلی شاہ کا نام ای سی ایل سے نہ نکال کرحکومت نے سپریم کورٹ کوچیلنج کیا۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ مڈٹرم الیکشن میں نہیں ہیں کیونکہ حکومت میں اہلیت کا فقدان ہے، موجودہ حکومت کے دور میں مہنگائی بلند سطح پر پہنچ چکی ہے ہم عوامی مسائل اور بڑھتی ہو ئی مہنگائی پر قومی اسمبلی میں احتجاج کریں گے ، ان کاکہنا تھا کہ علیمہ خان کی جائیداد کےبارے میں عمران خان کو وضاحت دینا ہوگی، دیکھیں گے اب فوجی عدالتوں کی ضرورت ہے بھی یا نہیں؟ہم سیاستدان الیکشن میں بڑے بڑےدعوے کرجاتے ہیں۔

رہنما پیپلز پارٹی کاکہناتھا کہ بلاول اور مرادعلی شاہ کانام ای سی ایل سےنہ نکال کرحکومت نےسپریم کورٹ کوچیلنج کیا،  کیاہماری باتوں سےلگتاہےکہ کو ئی ڈیل ہو ئی ہے ؟تحریک انصاف کامہنگائی کا سونامی غریب عوام کو تباہ کررہا ہے،مہنگائی کے طوفان کے بعد اب ادویات کی قیمتوں میں اضافہ ظلم ہے،پیپلز پارٹی ادویات کی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کرتی ہے، عمران خان کو جیسےسیٹیں ملیں اس لیے درست کہتا ہے کہ پارلیمنٹ جعلی ہے۔

وزیر اعظم عمران خان نےکہاکہ ہربدھ کو آکر پارلیمنٹ میں جواب دوں گا،پانچ مہینے گزر گئے مگر وزیر اعظم پارلیمنٹ میں نہیں آئے،بجلی،گیس پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کردیا گیا،ذات اوربرادری کےچکرمیں کرداردیکھےبغیرنمائندوں کوووٹ دیاجاتاہے،موجودہ حکومت قرضہ لینےسےخود کشی کرنےکی باتیں کرتی تھی،حکومت میں آنےسےپہلےکہاجاتاہے1کروڑنوکریاں دیں گےگھربنائیں گے،جس کے گھر میں بلب نہیں وہ20لاکھ میں گھر کیسےخریدے گا؟عوام موجود حکومت سے ایک بھی نوکری کی توقع نہ کریں۔

پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) کے قریب آنے سے متعلق خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ آصف زرداری نواز شریف سے تعزیت کے لیے ان کے گھر گئے، جیل میں جا کر ملنے کی روایت موجود نہیں ہے، نوازشریف کی تباہی کی وجہ پارلیمان کا راستہ بھول کرباہر کا راستہ پکڑنا ہے، آصف زرداری نے اختیارات پارلیمنٹ کو دے کرعوام کو مضبوط کیا، ہماری عدالتیں بہت مضبوط ہے، طاقتور نعروں سے دل خوش ہو گیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت کو بس ایک ہی فکر ہے قرضے کیسے لیے جائیں؟ 2008 میں جب بچہ پیداہواتواسےکان میں بتایاگیاتو72 ہزارکامقروض ہے،2017 میں پیداہونیوالے بچے کو کان میں کہا گیا تو 1 لاکھ 75 ہزار کا مقروض ہے،ہمارے ملک کی 70فیصد آبادی گھر بیٹھے کھاتی ہے،علاوہ ازیں جنوبی پنجاب کے بھائیوں کو دھوکا دیا گیا۔

 ہم نےکبھی کسی سے نہیں پوچھا کہ کس پارٹی سےتعلق ہے؟سیاست گالم گلوچ نہیں بلکہ خدمت کا نام ہے۔