بڑی عمر کی لڑکی سے شادی کرنے کے فوائد

بڑی عمر کی لڑکی سے شادی کرنے کے فوائد


(ویب ڈیسک) ہمارے معاشرے میں لڑکے سے بڑی عمر  کی لڑکی سے شادی کو ٹھیک نہیں سمجھا جاتا ،لوگ مختلف قسم کی باتیں کرتے ہیں لیکن حقیقت یہ ہے کہ بڑی عمر کی لڑکی سے شادی کرنے کا کوئی نقصان نہیں البتہ فوائد کافی ہیں۔

خاوند کی عمرزیادہ اوربیوی چھوٹی ہو ، یہ صرف بنی بنائی باتیں ہیں۔ بڑی عمر سے شادی کرنے میں کوئی نقصان ہوتا تو ہمارے پیارے  نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے ام المومنین خدیجہ رضی اللہ تعالی عنہا سے شادی نہ  کی ہوتی ۔ حضرت محمدصلی اللہ علیہ وسلم  نے جب ان سے شادی کی تو ام المومنین خدیجہ رضی اللہ تعالی عنہا کی عمرچالیس برس تھی اورنبی صلی اللہ علیہ وسلم اس وقت پچیس برس کے تھے ۔ 

یہ تو دینی لحاظ سے ثابت ہوگیا کہ بڑی عمر کی لڑکی سے شادی کے کوئی نقصانات نہیں اب تھوڑی سی سائنسی تحقیق پر نظر ڈال لیتے ہیں ۔ ایک تحقیق کے مطابق اگر مرد خود سے 10 سال بڑی عمر کی عورت سے شادی کرتا ہے تو ان کی زندگی کافی پر سکون گزرتی ہے۔ ماہرین کے مطابق بڑی عمر کی عورت کم عمر مرد کے ساتھ ازدواجی تعلقات کو پسند کرتی ہے اور مرد عورت کی خود اعتمادی، ذہنی پختگی پسند کرتا ہے جس کی وجہ سے یہ رشتہ اور مضبوط ہوتا ہے۔بڑی عمر کی عورت ایک اچھی ماں کے طور پر اپنے بچوں کا خیال رکھتی ہے، خاوند کو کاروبار یا نوکری کے بارے میں اچھے مشورے دیتی ہے، گھریلو معاملات کو اچھے سے دیکھتی ہے۔ 

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔