وزارت داخلہ کا زلفی بخاری کوبیرون ملک کا اجازت  نامہ دینے کے معاملہ پر یوٹرن

وزارت داخلہ کا زلفی بخاری کوبیرون ملک کا اجازت  نامہ دینے کے معاملہ پر یوٹرن


اسلام آباد ( 24نیوز ) وزارت داخلہ نے زلفی بخاری کوبیرون ملک جانے کے لیے اجازت نامہ دینے کے معاملہ پر یوٹرن لے لیا۔ زلفی بخاری کو بیرون ملک روانگی کا اجازت نامہ دینے پر وزارت داخلہ ، نیب اور نگران وزیراعظم آمنے سامنے آگئے۔

 تفصیلات کے مطابق  نگران وزیر داخلہ اعظم خان عمران خان فاؤنڈیشن کے بورڈ ممبر نکلے۔ عمران خان کے قریبی ساتھی زلفی بخاری کو بیرون ملک جانے کے لیے اجازت نامہ کس اختیارت کے تحت جاری کیا۔ معاملے پر وزارت داخلہ نے یو ٹرن لے لیا 11 جون کو نام ہٹانے کے لیے نوٹیفیکشن جاری کردیا۔ نگراں وزیراعظم کے نوٹس پر موقف اختیار کیا کہ نام ای سی ایل میں نہیں بلیک لسٹ میں شامل ہے۔

یہ بھی پڑھیں:سپریم کورٹ نے شیخ رشید کو اہل قرار دیدیا 

ادھرزلفی بخاری کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے معاملے پر نیب اور وزارت داخلہ آمنے سامنے آگئے ہیں۔ نیب ذرائع کا دعوی ہے کہ وزارت داخلہ نے نیب کی مشاورت یا آگاہ کئے بغیر زلفی بخاری کا نام ای سی ایل سے خارج کیریں۔ ای سی ایل پالیسی 2015 کے مطابق نام نکالنے یا خارج کرنے سے قبل متعلقہ ادارے سے مشاورت کرنا ضروری ہے۔

پڑھنا نہ بھولیں:عمران خان اور بشریٰ مانیکامیں کیسا رشتہ؟پول کھل گیا 

پندرہ آف شور کپمنیاں رکھنے والے ذوالفقار زلفی بخاری نیب کے مقدمات تین مرتبہ تفتیش کے لیے طلب کیا گیا مگر پیش نہیں ہوئے۔ نیب حکام کا کہنا ہےکہ زلفی بخاری کا نیب تفتئشی ٹیم کے سامنے پیش ہونے سے اجتناب انکا مجرمانہ فعل ہے۔ زلفی بخاری کا نام بلیک لسٹ سے نکالنے کے تانے بانے عمران خان اور نگران وزیر داخلہ اعظم خان کے ساتھ ملنے لگے۔ نگراں نگران وزیر داخلہ اعظم خان عمران خان فاؤنڈیشن کے بورڈ ممبر ہیں۔

یہ خبر ضرور پڑھیں:پرویزمشرف کووطن واپسی کے لیے کل دوپہر2بجے تک مہلت 

عمران خان فاؤنڈیشن کی ویب سائیٹ پر بھی اعظم خان نام بطور بورڈ ممبر موجود ہے۔