ممبئی حملوں میں بھارتی انتہا پسند ہندوں کے ملوث ہونے کا انکشاف

ممبئی حملوں میں بھارتی انتہا پسند ہندوں کے ملوث ہونے کا انکشاف


ممبئی(24 نیوز) دوہزارآٹھ کےممبئی حملے کے ماسٹرمائنڈ ،ہندودہشتگرد اوراسرائیلی تنظیمیں نکلیں، بھارت میں بنی دستاویزی فلم "رییزن"نے بھانڈا پھوڑ دیا۔

 بھارتی دستاویزی فلم "رییزن" نےممبئی حملوں میں بھارتی انتہاپسندہندوؤں کے ملوث ہونےکا بھانڈاپھوڑدیا۔ دستاویزی فلم کے پروڈیوسر آنند پٹواردھن ہیں۔ دستاویزی فلم میں ممبئی حملےاور پولیس افسر ہیمنت کرکرے کےقتل پر سوال اٹھائےگئےہیں۔ دستاویزی فلم کےمطابق بیشتر انتہاپسند ہندو تنظیمیں، آر ایس ایس کی مدد سے مسلمانوں کیخلاف برسرپیکارہیں،راشٹریہ سیوک سنگھ اور بی جے پی کی اعلیٰ قیادت دہشتگردی میں ملوث ہیں۔

دستاویز ی فلم میں بتایا گیا ہے کہ ہندوانتہاپسندبھارت میں جدت پسند، بین المذاہب ہم آہنگی اورامن کیلئے اُٹھنے والی آوازوں کو ایک منصوبے کے تحت خاموش کررہےہیں۔ فلم کےمطابق ہیمنت کرکرے کو مالی گاؤں دھماکے کے ناقابل تردید ثبوت مل گئے تھے ،اور یہی بات اس کے قتل کی وجہ بنی۔ 

ہیمنت نے ابھیناو، سناتن سنستھا جیسے دہشتگرد گروپس کی نشاندہی کی، ہیمنت، سوامی دیا آنند سمیت سنگھ پریوار کے اہم رہنماؤں کوبے نقاب کرنا چاہتے تھے۔ دستاویزی فلم کے مطابق ہیمنت کرکرے اور ان کی ٹیم، ہندو دہشتگردی کیخلاف واحد تحقیق کار تھے۔ دستاویزی فلم میں ممبئی حملے مشکوک قرار دے کر جامع تحقیقات کا مطالبہ کیا گیا ہے۔