سندھ حکومت بھی پنجاب کے نقش قدم پر چل نکلی

سندھ حکومت بھی پنجاب کے نقش قدم پر چل نکلی


کراچی( 24نیوز ) وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے حکومتی امور بہتر طریقے سے چلانے کیلئے اپنی ٹیم میں مزید اضافہ کرنے کا فیصلہ کرلیا بلاول بھٹو کی حتمی منظوری کے بعد 6 وزیر ایک مشیر اور مجموعی طور پر دس خاص مددگاروں کو ٹیم کا حصہ بنایا جائے گا۔
سندھ کابینہ میں اب مزید توسیع کرکے 18 ویں آئینی ترمیم کے تحت کابینہ ارکان کی تعداد پوری کی جائے گی ، بلاول بھٹو کی حتمی منظوری کے بعد اگلے ہفتے کابینہ میں توسیع متوقع ہے ،سندھ کابینہ میں مزید 6 وزیر ایک مشیر اور مجموعی طور پر دس معاون خصوصی کو شامل کیا جائے گا، جس کے بعد وزارءکی کل تعداد 18، مشیروں کی تعداد اور خاص معاونین کی تعداد دس ہوجائے گی ۔
سندھ کابینہ میں جن وزراءکو شامل کیا جائے گا ان میں پروین قائمخانی ، رانا ہمیر سنگھ، گھنور خان اسران، گیان چند اسرانی، ممتاز جکھرانی، ارباب لطف اللہ ،جام مدد علی اور سید اویس قادر شاہ متوقع ہیں ۔
مشیر کے طور پر ضیاءالحسن لنجار، ڈاکٹر کھٹو مل جیون یا دوست راہموں میں سے کسی ایک کو شامل کیا جائے گا ۔اسی طرح مجموعی طور پر دس معاونین خصوصی کو بھی شامل کیا جائے گا ۔
خاص مددگاروں میں فیاض بٹ، ڈاکٹر لاچند اکرانی، عبدالجبار خان، سید ذوالفقار علی شاھ، ندا کھوڑو، تاج محمد ملاح، غلام مرتضی بلوچ، تنزیلہ قمبرانی کے نام بھی سر فہرست ہیں ۔
یاد رہے پنجاب حکومت میں بھی 12نئے وزراءاور مشیروں کو شامل کرکے کابینہ کو وسعت دی گئی ہے،اس وقت پنجاب کے وزیروں ،مشیروں کی تعداد 45ہے۔