اختیارات کا ناجائز استعمال، نیب نے نواز شریف کو طلب کر لیا


لاہور (24نیوز) نیب نے رائیونڈ روڈ کیس دوبارہ کھول دیا۔ نوازشریف پر بھائی شہبازشریف سے مل کر ذاتی فائدہ کے لیے سڑک بنانے کا الزام۔ نیب نے سابق وزیراعظم نوازشریف کو رائیونڈ روڈ کیس میں 21 اپریل کو ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا۔

24نیوز کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف کی مشکلات ہیں کہ کم ہونے کا نام ہی نہیں لے رہیں۔ سپریم کور ٹ کا اہم فیصلہ آیا۔ ادھر نیب نے رائے ونڈ روڈ کیس میں سابق وزیراعظم نوازشریف کو 21اپریل کو ذاتی حیثیت میں بلا لیا۔

یہ بھی پڑھیں: نواز شریف، جہانگیر ترین تاحیات نا اہل، سپریم کورٹ نے فیصلہ سنا دیا 

میاں نواز شریف کو رائے روڈ کی تعمیر میں ضلع کونسل کے فنڈز استعمال کرنے کے الزام میں طلب کیا گیا۔ نوازشریف پر الزام ہے کہ نوازشریف نے بطور وزیر اعظم 1998میں اختیارات کا ناجائز استعمال کیا۔ نوازشریف پر بھائی شہبازشریف ساتھ مل کر ذاتی فائدے کے لیے اڈا پلاٹ سے جاتی امراء تک ذاتی فوائد کے لیے سڑک بنوائی۔

پڑھنا نہ بھولیں: ’’عمران خان نے عوام کے ووٹ کوزرداری کے ہاتھ بیچ دیا‘‘ 

نواز شریف کے حکم پر سڑک کی چوڑائی 20 فٹ سے 24 فٹ کی گئی جس سے منصوبہ کی مجموعی لاگت بڑھی۔ نوازشریف کے حکم پرعوامی منصوبہ بند کرنے سے عوام کا نقصان ہوا۔ اس کیس میں نیب پہلے بھی وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو طلب کر چکا ہے۔