ایشز سیریز میں کھیل سے کھلواڑ کرنے کا انکشاف


پرتھ (24نیوز) جنٹل مین کا کھیل کرکٹ تیسری صدی میں ہرگزشریفوں کا کھیل نہیں رہا، اسپاٹ فکسنگ کے داغ نے کرکٹ کودورجدید میں پیسے کی جنگ بنادیا،برطانوی اخبارکاایشزکےتیسرے پرتھ ٹیسٹ کے دوران سٹے بازی کی کوشش ناکام بنانے کا دعویٰ،خفیہ آپریشن کی تفصیلات آئی سی سی کودی گئیں لیکن اس نے معاملے کی تردید کردی۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی اخبار دی سن کا دعویٰ ہے کہ اس نے اپنی خفیہ تحقیقات میں بھارتی گینگ کو بے نقاب کردیا ، دو بکیز سے ایسے شواہد حاصل کر لئے جس سے صاف پتا چلتا ہے آج سے پرتھ میں کھیلا جارہا آسٹریلیا انگلینڈ ایشزسیریز کا تیسرے ٹیسٹ میچ کے دوران سٹے بازی کی جانی تھی۔

اخبار نے تہلکہ خیز معلومات پر مبنی تمام ثبوت آئی سی سی کو مہیا کردئیے جس پر آئی سی سی نے برطانوی اخبار کی کاوش کو سراہتے ہوئے اینٹی کرپشن یونٹ کی مدد سے اس پر کارروائی کا آغازکردیا، بھارتی میچ فکسر سوبرزجوبن اورپریانک سکسینا نے اخبار کے خفیہ کردار سے ایک اوور میں عین کتنے رنز بنیں گے اس کی درست ٹپس کے عوض ایک لاکھ چالیس ہزار برطانوی پاونڈ طلب کئے۔

بھارتی بکیز نے یہ دعویٰ کیا کہ سائیلنٹ مین کے خفیہ نام سے معروف آسٹریلوی کرکٹر سے ملکر وہ فکسنگ کررہے ہیں،آپریشن کے دوران کسی موجودہ انگلش کرکٹر کانام سامنے نہیں آیا، کرکٹ میں بدعنوانیوں بارے ایک ماہر ایڈ ہاکنز اسپاٹ فکسنگ کو کرکٹ کےکھیل کے لئے تباہ کن قرار دیا ہے۔

بھارتی بکیز نے بتایا کہ ٹی 20 لیگ کے میچوں میں اسپاٹ فکسنگ ہوتی ہے اور وہ آسٹریلیا کی بگ بیش ،انڈین پریمئر لیگ،بنگلہ دیش لیگ میں میچز کے دوران اسپاٹ فکسنگ کرتے رہے ہیں ،فکسنگ گٹھ جوڑ کی معلومات وبئی اور دہلی کے مختلف ہوٹلوں میں خفیہ آپریشن کے ذریعے سے یہ معلومات چار ماہ کی تگ و دو کے بعد حاصل کی ہیں۔