نواز شریف کی وطن واپسی، شہباز شریف اپنا وعدہ نہ نبھا سکے

نواز شریف کی وطن واپسی، شہباز شریف اپنا وعدہ نہ نبھا سکے


لاہور(24نیوز) سابق وزیر اعظم نواز شریف کی لاہور ایئرپورٹ کے باہر کارکنوں کی خواہش پوری نہ ہو سکی. شہباز شریف نے ایئرپورٹ پہنچنے میں ہی دیر کر دی ۔ ریلی ابھی راستے میں ہی تھی کہ نواز شریف کو لاہور سے اڈیالہ جیل پہنچا دیا گیا. 

اسے سیاسی مصلحت کہیں، پولیس کی رکاوٹیں  یا کہانی کچھ اور تھی؟ بڑے میاں ایئرپورٹ پر کارکنوں کی شکل کو ترس گئے.  چھوٹے میاں کارکنوں کو ڈنڈے کھلاتے سڑکوں پر ہی گھماتے رہے۔ نواز شریف لندن سات گھنٹے میں ابوظہبی پہنچے  وہاں بھی سات گھنٹے قیام کیا.  پھر وہاں سے بھی اڑان 2 گھنٹے فلائٹ لیٹ ہوگئی۔چھوٹے میاں  یعنی شہبازشریف جو دنیا میں سپیڈو کے نام سے مشہور ہیں . انھوں نے  قائد کے فقید المثال استقبال کے دعوے تو بہت کئے لیکن تقریباً 24 گھنٹے کا وقت ملنے کے باوجود شہباز کی پرواز ایئرپورٹ نہ پہنچ سکی۔

یہ بھی پڑھیں: اڈیالہ جیل،نواز شریف،مریم نواز کس حال میں ہیں؟

نوازشریف اور مریم نواز کو لاہور سے اڈیالہ جیل بھی پہنچا دیا گیا  لیکن شہبازشریف کی دوپہر کے بعد نکلنے والی ریلی اندرون لاہور سے چیئرنگ کراس تک ہی پہنچ پائی۔شہبازشریف اکثر جلسوں میں حبیب جالب کی نظم، ایسے دستور کو، صبح بے نور کو میں نہیں جانتا، میں نہیں مانتا پڑھتے رہے ہیں۔شہبازشریف نے حبیب جالب کی نظم پر تو عمل نہیں کیا البتہ ان کے عمل سے ان پر منیر نیازی کی نظم ہمیشہ دیر کردیتا ہوں، فٹ ہوگئی

اب شہبازشریف کی راہ میں انتظامیہ رکاوٹ بنی یا ان کی کوئی سیاسی مصلحت تھی یا اندر کی کہانی کچھ اور تھی، یہ تو چھوٹے میاں خود ہی بتا سکتے ہیں۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔