سپریم کورٹ ، عائشہ گلا لئی سے متعلق کیس کی سماعت ، فیصلہ آگیا


اسلام آباد(24نیوز) سپریم کورٹ نے عائشہ گلا لئی کوڈی سیٹ کرنے کی عمران خان کی درخواست مسترد کردی ۔

 تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے کیس کئی سماعت کی ۔ سماعت کے دوران چیف جسٹس نے عمران خان کے وکیل سے پوچھا کہ عمران خان کا مسئلہ کیا ہے؟ کس بنا پر عائشہ گلالئی کی ناہلی چاہتے ہیں؟ عمران خان کے وکیل نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن کے فیصلہ کےخلاف اپیل کی ہے، چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا کہ اپیل کرنا آپ کاحق ہے، عدالت اپیل پرنوٹس جاری کرنے کی پابند نہیں،چیف جسٹس ثاقب نثار نے دوبارہ استفسار کیا کہ پہلے یہ بتائیں نا اہلی کس بنیاد پر چاہتے ہیں؟

عمران خان کے وکیل نے کہا کہ عائشہ گلالئی نے پارٹی ہدایات پر وزارت عظمیٰ کیلئے امیدوار کو ووٹ نہیں ڈالا تھا۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے استفسار کیا کہ کیا پارٹی چیئرمین نے وزیراعظم کے انتخاب میں خود ووٹ دیا تھا؟

چیف جسٹس آف پاکستان نے استفسار کیا کہ کیا عائشہ گلالئی نے استعفیٰ دے دیا ہے؟اس پرعمران خان کے وکیل نے کہا کہ جی نہیں۔عائشہ گلالئی نے ایک پریس کانفرنس میں کہا پارٹی چھوڑ رہی ہوں۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ شیخ رشید نے بھی کہاتھا استعفیٰ دے رہاہوں، چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا کہ سیاسی لوگ ایسے بیانات دیتے رہتے ہیں۔ سپریم کورٹ نے وکیل عمران خان کے دلائل پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے عائشہ گلالئی کے خلاف کی جانے والی اپیل کو مسترد کردیا۔