نواز شریف زیادہ دیر مزاحمت نہیں کر سکتے،سمجھوتہ کرنا ہی پڑیگا:لیاقت بلوچ

لاہور(24 نیوز)جماعت اسلامی کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے ن لیگ کو تجویز دی کہ وزیر خزانہ کو فارغ کرنے سے اداروں کو یہ پیغام جائے گا کہ وہ اب مخاصمت کی پالیسی پر گامزن نہیں


لاہور(24 نیوز)جماعت اسلامی کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے ن لیگ کو تجویز دی کہ وزیر خزانہ کو فارغ کرنے سے اداروں کو یہ پیغام جائے گا کہ وہ اب مخاصمت کی پالیسی پر گامزن نہیں بلکہ عدالت اور قانون کے فیصلوں کو قبول کرنے کے لیے تیار ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وحدت روڈ پر جماعت اسلامی حلقہ خواتین کے زیر اہتمام شادی گفٹس کی تقریب کے بعد گفتگو کرتے ہوئے لیاقت بلوچ کا کہنا تھا کہ نواز شریف اداروں سے ٹکراو کی پالیسی میں تنہا ہیں اور اپنے اس مزاحمتی راستے میں زیادہ دیر نہیں رہ سکتے ، انہیں بلآخر سمجھوتے کے ساتھ ہی چلنا ہوگا۔

انھوں نے کہا کہ اس کے علاوہ ان کے پاس کوئی آپشن نہیں ، تباہ ہوتی معیشت کے ذمے دار وزیر خزانہ سے استعفٰی لے لینا چاہیے یہی بہتر ہے ، وزیر خزانہ کو فارغ کرنے سے بنیادی پیغام آئے گا کہ ن لیگ اب اداروں سے مخاصمت نہیں چاہتی ۔

 

لیاقت بلوچ کا کہنا تھا کہ مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس خوش آئند ہے لیکن ابھی تک معاملات شکوک و شہبات میں ہیں ، مردم شماری کا نوٹیفکیشن ابھی تک نہیں ہوا ،سینیٹ میں ایک نااہل شخص کے پارٹی قیادت کا بل منظور کرایا گیا ہے جس پر اب اپوزیشن سٹینڈ لے سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جمہوری سیاسی قوتوں کو اپنے دائرہ کار میں رہتے ہوئے انتخابات کی طرف جانا چاہئے، اگر سیاسی جمہوری قوتوں کے ہاتھ سے معاملہ نکل کر کسی اور کے ہاتھ میں چلا گیا تو پھر وہ اپنی مرضی کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی اور جے یو آئی کسی کی اتحادی نہیں ہے ، دینی جماعتوں کے اتحاد کے لیے بات چیت مکمل ہو چکی ہے۔ جماعت اسلامی حلقہ خواتین کی جانب سے چالیس جوڑوں کو شادی گفٹس پیکس دئیے گئے ۔