لندن فلیٹس ریفرنس،نیب نے مریم نواز، کیپٹن (ر) صفدر کیخلاف درخواست واپس لے لی

لندن فلیٹس ریفرنس،نیب نے مریم نواز، کیپٹن (ر) صفدر کیخلاف درخواست واپس لے لی


اسلام آباد (24نیوز) مریم نوازاور ان کے شوہر کیپٹن (ر) صفدر کیخلاف لندن فلیٹس ریفرنس میں نیب کی جانب سے درخواست واپس لینے پر خارج کردی گئی ہے۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت نے مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کے خلاف فرد جرم میں ترمیم کی درخواست جزوی طور پر منظور کرتے ہوئے جعلی دستاویزات کی دفعات حذف کرنے کا حکم دیا تھا، جس کے بعد کیلبری فونٹ کی جعلی دستاویز سے متعلق سیکشن 3 اے کو فرد جرم سے نکال دیا گیا تھا،تاہم نیب کی جانب سے سیکشن 3 اے نکالنے کا احتساب عدالت کا حکم چیلنج کیا گیا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ سیکشن 3 اے نکال کر غیر قانونی حکم دیا گیا۔ نیب نے اپنی درخواست میں مریم نواز اور کیپٹن صفدر کے خلاف سیکشن 3 اے کو فرد جرم میں شامل کرنے کی استدعاکی تھی۔

جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس گل حسن اورنگزیب پر مشتمل اسلام آبادہائیکورٹ کے ڈویژن بینچ نے نیب کی درخواست کی سماعت کی، درخواست میں نیب کی جانب سے کہا گیا ہے کہ لندن فلیٹس کیس میں ضمنی ریفرنس دائرکررہے ہیں،اس لئے فرد جرم میں تبدیلی کے حوالے سے اپنی درخواست واپس لیتے ہیں،اسلام آباد ہائیکورٹ نے نیب کی درخواست واپس لینے کی استدعا منظورکرتے ہوئے خارج کردی۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ کے پاناما کیس سے متعلق 28 جولائی 2017 کے فیصلے کی روشنی میں نیب نے شریف خاندان کے خلاف 3 ریفرنسز احتساب عدالت میں دائر کئے جو ایون فیلڈ پراپرٹیز، العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسمنٹ سے متعلق تھے۔

نیب کی جانب سے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس ( لندن فلیٹس ) ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف ان کے بچوں حسن اور حسین نواز، بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کو ملزم ٹھہرایا گیا۔