ساڑھے 800 سال پرانا چرچ جل گیا

 ساڑھے 800 سال پرانا چرچ جل گیا


پیرس(24نیوز)فرانس میں ساڑھے 800 سال پرانا چرچ آگ لگنے سے جل گیا،نوٹرڈیم چرچ کی چھت جل گئی، ایک مینار بھی گر گیا،دنیا میں مسیحی برداری افسردہ،عالمی رہنماوں نے بھی افسوسناک واقعے پر گہرے دکھ کا اظہار کیا۔

دنیامیں اپنی تاریخی حیثیت سے مشہور ساڑھے 8 سو سال قدیم پیرس کا نوٹرڈیم چرچ ہولناک آتشزدگی میں جل گیا،عمارت کا اصل ڈھانچہ بچ جانے کے بعد چرچ کو مکمل تباہی سے بچا لیا گیا،400 فائر فائٹرز نے آگ بجھانے میں حصہ لیا۔

آگ کی لپیٹ میں آیا چرچ گوتھک آرٹ کا شاہکار تھا۔ چرچ کی تعمیر1160 سے 1260میں کی گئی۔ ہر سال ایک کروڑ20 لاکھ سیاح دنیا بھر سے شاہکار چرچ کو دیکھنے آتے ہیں۔

فرانسیسی صدر ایمانول میکرون نے تاریخی چرچ کو اصل حالت میں بحال کرنے کا اعلان کیا ہے،امریکی صدر ٹرمپ نے بھی چرچ میں ہونے والی تباہی پر افسوس کا اظہار کیا۔اس موقع پر ہالی ووڈ اداکارہ سلمیٰ ہائیک کے شوہر فرینکو ہینری نے خوب فراخدلی دکھائی۔انہوں نے چرچ کی تعمیر نو کے لیے دس کروڑ یورو دینے کا اعلان کیا ہے۔ سلمیٰ ہائیک کے شوہر فرانسیسی ارب پتی ہیں ۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer