سروں کے سلطان نصرت فتح علی خان کو بچھڑے 22 برس بیت گئے

سروں کے سلطان نصرت فتح علی خان کو بچھڑے 22 برس بیت گئے


فیصل آباد(24 نیوز)اپنے سروں سے دنیا میں پہچان بنانے والے استاد نصرت فتح علی خان کو ہم سے بچھڑے بائیس برس بیت گئے، استاد نصرت سحر میں سر لگاتے تو پتے کھل جاتے فضا مہک جاتی ،آج بھی ان کے کروڑوں پر ستار ان کی یاد میں غمگین ہیں۔

سنگیت میں کرہ ارض پر سروں پر جو عبور استاد نصرت فتح علی خان نے حاصل کیا وہ کم ہی کسی کو نصیب ہوا، موسیقی کی دنیامیں ایسا نام پیدا کیا کہ اسے کوئی چھو بھی نہ پایا ۔استاد نصرت نے بے شمار مشہور زمانہ قوالیاں گائیں جنہوں نے دنیا بھر میں انکو مقبولیت دی۔

حمد سے لے کر صوفی ازم کو پڑھنے تک استاد نصرت کا کوئی جوڑ نہ تھا۔ قوالی سے شہرت کی بلندیوں کو چھوا۔48برس کی عمر میں دوران علاج کروم ویل ہسپتال میں دل کا دورا پڑا اور وہ خالق حقیقی سے جا ملے  لیکن وہ آج بھی اپنی قوالیوں اور گیتوں کی وجہ سے عوام میں زندہ ہیں۔

ضرور پڑھیں:انکشاف، 24 اگست2019

استاد نصرت کو جھنگ روڈ پر موجود قبرستان میں ہزاروں پرستاروں کی موجودگی میں سپردخاک کیا گیا،استاد نصرت فتح علی خان وہ ستارہ ہیں جو ٹوٹ کے چاہے کتنا بھی دور چلا جائے لیکن سروں کی وجہ سے اسکی روشنی کبھی کم نہ ہوگی۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer