24 نیوز کھلے سمندر میں پھنسے جہاز کے پاکستانی عملہ کی آواز بن گیا

24 نیوز کھلے سمندر میں پھنسے جہاز کے پاکستانی عملہ کی آواز بن گیا


24 نیوز : ایران کے شہر ’بو‘ کے ساحل سے 5 نائیٹکل میل کی دوری پر سیم سیون جہاز کھلے سمندر میں پھنس گیا۔ عملہ میں 6 پاکستانی بھی شامل ہیں، جن کی زندگی کو خطرات لاحق ہو گئے۔

ایران کے شہر بو کے ساحل سے 5 ناییٹیکل کی دوری پر سیم سیون جہاز سمندر میں پھنس گیا جس میں چھ پاکستانی بھی شامل ہیں جہاز پر پھنسے عملہ نے 24 نیوز سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری آواز بلند کر کے ہمیں مشکل سے نکالا جائے۔ تین ماہ سے یہاں موجود ہیں آٹھ ماہ سے تنخواہ نہیں ملی جس کی وجہ سے گھروں پر فاقے ہو رہے ہیں۔ وزارت داخلہ اور وزارت خارجہ سمیت پاکستانی سفارتخانہ کو خط بھی لکھ دیا ہے مگر کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔

یہ بھی پڑھئے: لیبیا کشتی حادثے میں جاں بحق 11 افراد کی لاشیں پاکستان پہنچا دی گئیں

چیف انجئینر عتیق کا کہنا ہے کہ جہاز میں کھانے پینے کا سامان ختم ہو چکا ہے اور تین ماہ سے جہاز ایک ہی مقام پر کھڑا ہے۔ عملہ کے افراد بیماریوں کا شکار ہو رہے ہیں۔ جہاز پر بھیجنے والی کمپنی بھی کوئی اقدام نہیں کر رہی اور جہاز کا مالک بھی ہماری کال رسیو نہیں کررہا ہے

چیف انجینئر کا کہنا ہے کہ ہم 2017 میں جہاز پر آئے تھے ہمیں جہاز دبئی سے ایران لے جانے کا حکم دیا گیا تھا۔ جیسے ہی جہاز ایران کی حدود میں داخل ہوا تو ایران کے اداروں نے جہاز کو حراست میں لے لیا۔