کوئٹہ میں چرچ پر حملہ مذہبی اختلافات کو ہوا دینے کی کوشش ہے: آرمی چیف


اسلام آباد (24 نیوز) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کوئٹہ میں چرچ پر حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کوئٹہ حملہ کرسمس کی تقریبات پر مذہبی منافرت پھیلانے کیلئے کیا گیا۔ صدر مملکت ممنون حسین اور وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے تمام زخمیوں کو علاج کی بہترین سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کر دی۔

آرمی چیف نے کوئٹہ چرچ حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حملے میں مسیحی بھائیوں کو نشانہ بنایا گیا۔ کوئٹہ میں چرچ پر حملہ مذہبی اختلافات کو ہوا دینے کی کوشش ہے۔ آرمی چیف کا مزید کہنا تھا کہ سیکیورٹی فورسز کی بروقت کارروائی قابل ستائش ہے۔

دوسری جانب صدر مملکت ممنون حسین، وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سمیت متعدد سیاسی رہنمائوں نے کوئٹہ میں چرچ پر ہونے والے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک سے دہشتگردوں کا مکمل صفایا کئے بغیر چین نے نہیں بیٹھیں گے۔ کوئٹہ دھماکے کے حوالے سے صدر اور وزیر اعظم نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کو ہدایت کی ہے کہ تمام زخمیوں کو علاج کی بہترین سہولیات فراہم کی جائیں۔

سابق صدر آصف علی زرداری، اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ، چیئرمین سینٹ میاں رضا ربانی اور سابق وزیر داخلہ رحمان ملک نے بھی کوئٹہ دھماکے کی شدید مذمت کی اور قیمتی جانوں کے ضیاع پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔