عید کا دوسرا روز،موسم اور شہریوں کے سیر سپاٹے


کراچی ( 24نیوز ) عیدالفطر کے مبارک تہوار پر شہریوں پر قدرت بھی مہربان ہوگئی،موسم ٹھنڈا ہونے پر عید کے دوسرے روز بھی شہریوں کے سیر سپاٹے جاری ہیں ۔

بچے پہنچے چڑیا گھر، بندر ہرن اور جانوروں کی اٹکھیلیاں دیکھنے تو ساحل پر بھی شہری ہوتے رہے ٹھنڈی ٹھار ہواوں اور سمندر کی موجوں سے محظوظ۔ والدین کا کہنا ہے بچوں کی فرمائش کے آگے ہار ماننی پڑتی ہے اور سیروتفریح کے لئے چڑیا گھر سے بہتر کوئی مقام نہیں ۔

یہ بھی لازمی پڑھیں: ملک بھر میں عیدالفطر مذہبی جوش و خروش سے منائی جارہی ہے

کراچی کے شہری خوشگوار موسم میں عیدالفطر کے دوسرے روز بھی بھرپور انجوائے کر رہے ہیں، شہریوں نے صبح صبح ناشتے کے لئے حلوہ پوری کی دکانوں کا رخ کیا،کوئی دوستوں کے ساتھ آیا تو کوئی فیملی کے ساتھ ناشتے اور گپ شپ میں مصروف رہا ،شہری کہتے ہیں موسم بھی اچھا ہے اسی لئے دوستوں کے ساتھ حلوہ پوری کھانے آئے ہیں ۔

خوشگوار موسم میں چٹ پٹی حلوہ پوری کے ساتھ ناشتہ کرکے شہریوں نے اپنوں کے ساتھ خوب انجوائے کیا اور اپنے ان خوبصورت لمحات کو یادگار قرار دیا، عیدالفطر کے دوسرے روز کراچی والے پہنچ گئے ساحل سمندر کی ٹھنڈی لہروں سے لطف اندوز ہونے،کسی نے گھڑ سواری کی تو کوئی پانی میں ڈوبکیاں لگاتا رہا۔

ساحل کی موجوں اور نظاروں سے لطف اندوز ہونے والے شہری کہتے ہیں پہلا دن مہمان نوازی کا ہوتا ہے، تو عید کا دوسرا فیملی کے ساتھ پکنک کا ہونا ضروری ہے ،محکمہ موسمیات نے بھی آئندہ چند روز تک شہریوں کو خوشگوار موسم کے ساتھ بوندابانی کی نوید بھی سنادی ہے ۔

یہ بھی لازمی پڑھیں: عید پر گرمی بھی چھٹیوں پر چلی گئی

عید کے دوسرے روز کراچی سمیت سندھ بھر کے مختلف اضلاع سے ہزاروں افراد نے عید کو کی خوشیوں کو دوبالا کرنے کے لیئے کینجھر جھیل کا رخ کیا ،بچے بوڑھے اور نوجون نے ٹھنڈے ٹھنڈے پانی میں ڈوبکیاں مار کر خوب لطف اٹھایا گانے بجانے کے پروگرام کے ساتھ کشتیوں میں بیٹھ کر جھیل کی سیر بھی کی،بریانی قورمہ تکے بوٹی سے تو تفریح کامزہ ہی دوبالا ہو گیا،شہریوں کا کہنا تھا کہ عید کا دوسرا روز ہے اور گھومنا پھرنا تو بنتا ہے۔

کینجھر جھیل ایشیاءکی سب سے بڑی جھیل ہے جہاں چھٹی کے دن ہزاروں افراد سیر کرنے کیلئے آتے ہیں مگر یہاں سہولیات فقدان ہے،جھیل کنارے پر سیاحوں کے لیے بیٹھنے کا بھی کوئی مناسب انتظام نہیں ہے جس کے باعث سیر کے لئے آنے والی فیملیز کو پرائیویٹ طورپر بنائے گئے پتھاروں میں منہ مانگے پیسے دے کر بیٹھنا پڑتا ہے۔

تفریح کے لیئے آنے والے شہریوں کا کہنا ہے کے کینجھر جھیل گھومنے کے لیئے ایک بہترین مقام ہے مگر مناسب سہولیات نہ ہونے کے باعث یہاں آنے والوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔