ن لیگ کے بغیر قائمہ کمیٹیوں کی تشکیل کیلئے حکومت نے غو ر شروع کردیا

ن لیگ کے بغیر قائمہ کمیٹیوں کی تشکیل کیلئے حکومت نے غو ر شروع کردیا


اسلام آباد( 24نیوز ) مسلم لیگ ن کے بغیر قائمہ کمیٹیوں کی تشکیل کا معاملہ حکومت کے پاس کون کون سے آپشنز ہیں؟ تحریک انصاف نے سوچ بچار شروع کر دی۔

ذرائع کے مطابق تحریک انصاف مقررہ تعداد سے کم ارکان کی کمیٹیوں کی تشکیل کر سکتی ہے، بائیکاٹ ختم ہونے کی صورت میں اپوزیشن ارکان کو بعد میں شامل کر دیا جائے گا، پہلے مرحلے میں قانون سازی کیلئے اہم کمیٹیاں تشکیل دی جا سکتی ہیں۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ جن کمیٹیوں کی سربراہی اپوزیشن کو دینے کا فیصلہ ہوا ان کے چئیرمین کا انتخاب نہیں کرایا جائے گا، پیپلزپارٹی کو کمیٹیوں میں شامل کرنے کیلئے سید نوید قمر کو چیئرمین پی اے سی بنائے جانے کی تجویز بھی غور کیا جارہا ہے، حکومت کو نوید قمر کے نام پر ن لیگ کی جانب سے بھی رضا مندی کی امید ہے۔

ضرور پڑھیں:انکشاف15 جون 2016

یاد رہے حکومت کی طرف سے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو پی اے سی کا چیئرمین نہ بنائے جانے پر دیگر قائمہ کمیٹیز کی تشکیل بھی تاخیر کا شکار ہے،اپوزیشن نے ان کمیٹیز کی سربراہی قبول کرنے سے انکار کرکھا ہے۔

خیال رہے گزشتہ روز وزیر اعظم عمران خان نے واضح طور پر کہا ہے کہ پی اے سی کی سربراہی شہباز شریف کو نہیں دی جاسکتی،پی ٹی آئی کے رہنما بھی متعدد بار کہہ چکے ہیں کہ شہباز شریف کو پی اے سی کا چیئرمین بنانا بلے کو دودھ کی رکھوالی پر بٹھانے کے مترادف ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer