وزیر خزانہ اسد عمر مستعفی ہوگئے



اسلام آباد(24نیوز) وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر مستعفی ہوگئے،انہوں نے وزارت چھوڑنے کا فیصلہ کرلیا۔

وزیر خزانہ اسد عمر کو عہدے سے ہٹائے جانے سے متعلق خبریں پچھلے دنوں سرگرم تھیں تاہم اب اسد عمر نے سوشل میڈیا پر اس حوالے سے کہا کہ وہ کابینہ کا حصہ نہیں رہیں گے۔ 

اسد عمر نے کہا کہ کابینہ میں تبدیلی سے متعلق وزیراعظم کی خواہش ہے میں وزارت خزانہ چھوڑ کر توانائی کی وزارت لے لوں لیکن میں نے وزیراعظم کو اعتماد میں لیا ہے کہ میں کابینہ کا مزید حصہ نہیں رہوں گا۔

یاد رہے 24نیوز کے سینئر اینکر پرسن نجم سیٹھی نے اپنے پروگرام ’’نجم سیٹھی شو‘‘میں اسد عمر کے وزارت چھوڑنے کی خبر دی تھی۔

اسد عمرنے کہا ہے کہ مجھے وزارت پٹرولیم دینے کی پیشکش کی گئی تھی ،انہوں نے کوئی بھی وزارت لینے سے انکار کردیا ہے۔

وزیر اعظم کابینہ میں ردو بدل کرنے جارہے ہیں:پریس کانفرنس

اسد عمر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعظم کابینہ میں ردو بدل کرنے جارہے ہیں،نئے پاکستان کے ویژن کو سپورٹ کرنے کیلئےاب بھی تیار ہوں،پی ٹی آئی کا سپورٹرز اور کارکنوں کا شکر گزار ہوں۔نیا وزیر خزانہ بھی مشکل میں ہوگا،وزارت خزانہ مشکل ترین جاب ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ مشکل فیصلے کرنے کی ضرورت ہے،نئے وزیر خزانہ کی ہروقت مدد کیلئے تیار ہوں،اگلے تین چار ماہ مشکل ہوں گے،یہ نہ سمجھیں دودھ اور شہد کی ندیا ں بہیں گی۔تحریک انصاف عمران خان کیلئے جوائن نہیں کی ہے،آج رات یا کل صبح کابینہ تبدیل ہوجائے گی۔آئندہ بجٹ آئی ایم ایف کا ہوگا۔

حکومتی معاشی پالسیاں اچھی تھیں تو استعفیٰ کیوں ؟ مریم اورنگزیب

اسد عمرکے وزرات خزانہ کا قلمدان چھوڑنے کے معاملہ پر ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب نے ٹوئیٹ کیا ہے کہ اگر حکومت کی پالیسیاں بہت اچھی تھیں تو پھر کیا ہوا۔

کیوں اسد عمر کو وزرات خزانہ چھوڑنے کا کہا گیا، اسد عمر کا جانا اس بات کا ثبوت ہے کہ عمران خان کی معاشی پالیسیاں ناکام ہیں، اصل مسئلہ اسد عمر نہیں بلکہ وزیر اعظم عمران خان خود ہیں۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer