انتظار احمد قتل کیس، ایس ایس پی مقدس حیدر کو عہدے سے ہٹا دیا گیا


کراچی (24 نیوز) کراچی ڈیفنس میں انتظار احمد قتل کیس میں نیا موڑ آ گیا، جوڈیشل انکوائری سے بچنے کے لئے پولیس کے اعلیٰ حکام نے ملبہ ایس ایس پی اے سی ایل سی پر ڈال دیا۔ اینٹی کار لفٹنگ سیل کے ایس ایس پی مقدس حیدر کو عہدے سے ہٹا دیا گیا۔

کراچی کے علاقے ڈیفنس میں قتل ہونے والے نوجوان انتظار کے کیس میں بڑی پیش رفت، 9 اے سی ایل سی اہلکاروں کی گرفتاری کے بعد ایس ایس پی مقدس حیدر کو عہدے سے ہٹا دیا گیا۔ آئی جی سندھ کے احکامات پر جاری کردہ نوٹیفکیشن کے تحت ایس ایس پی مقدس حیدر کو عہدے سے ہٹا کر سینٹرل پولیس آفس رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق انتظار احمد پر فائرنگ کے واقعے میں ملوث دو اہلکاروں بلال اور دانیال کو ایس ایس پی مقدس حیدر کے قریبی سمجھا جاتا ہے۔ دوسری جانب نیشنل کیمشن فارہیومن رائٹس نے ازخود نوٹس لیتے ہوئے آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ سے 25 جنوری کو تفصیلی رپورٹ طلب کر لی ہے۔