پاکستان کی پہلی خاتون شہید پائلٹ کی آج 26ویں سالگرہ

پاکستان کی پہلی خاتون شہید پائلٹ کی آج 26ویں سالگرہ


کراچی(24نیوز) بہادری کی مثال قائم کرنے والی پاکستان کی پہلی خاتون شہید پائلٹ مریم مختار کا آج 26ویں سالگرہ ہے،مریم مختار نے تربیتی جنگی جہاز میں خرابی کے دوران انسانی آبادی کو بچاتے ہوئے 24 نومبر 2015 کو شہید ہونے کا اعزاز حاصل کیا۔

تفصیلات کے مطابق 18 مئی 1992 کو کراچی میں پیدا ہونے والی مریم کے بارے میں کون جانتا تھا کہ یہ آگے جاکر وہ کام کرجائے گی جس سے ہر پاکستانی کا سر اونچا ہوجائے گا۔ ابتدائی تعلیم کے بعد مریم مختیار نے مئی 2011 میں پاک فضائیہ کے 132ویں جی ڈی پائلٹ کورس میں شمولیت اختیار کی۔ پی اے ایف رسالپور سے مریم کو فائٹر کنورشن کیلیے ایم ایم عالم ایئر بیس بھیجا گیا۔ جہاں مریم نے لڑاکا طیاروں کی تربیت حاصل کرنا شروع کی۔

یہ بھی ضرور پڑھیں:بھارت کا کڑا وار، چناب اور جہلم کا پانی روک لیا 

 24 نومبر2015کی صبح مریم اپنے انسٹرکٹر کے ہمراہ تربیتی پرواز پر روانہ ہوئیں۔ایک اہم مشن کے دوران مریم مختیار کے ڈبل کاک پٹ تربیتی جنگی جہاز میں اچانک سنگین نوعیت کی فنی خرابی پیدا ہوئی۔ ہزاروں فٹ کی بلندی،  کریش ہوتا جہاز، مریم مختیار جہاز کو آبادی سے دور لے گئیں تاکہ انسانی جانیں بچ سکیں۔ ایسے میں پاکستان کی پہلی خاتون جنگی پائلیٹ نے اپنی جان دیکر جامِ شہادت نوش کیا اور اپنے آپ کو 1965 اور 1971 کے شہدا میں شامل کیا۔ واضح رہے کہ مریم مختیار پاکستان کی پہلی خاتون پائلیٹ تھیں تو یہ اعزاز بھی اپنے نام کیا کہ یہ پاکستان کی پہلی خاتون شہید پائلیٹ ہیں۔