بھارت کی آبی دہشتگردی جاری، سیلاب کا خطرہ



( 24نیوز )بھارت نے دریائے ستلج میں پانی چھوڑ دیا، ڈیڑھ سے 2لاکھ کیوسک پانی کا ریلا اگلے 8سے 20گھنٹے میں گنڈا سنگھ والا کے مقام پر پاکستان میں داخل ہوگا، قصور اور اطراف کے علاقوں کے افراد کو الرٹ رہنے کی ہدایات جاری کردی گئی۔

ترجمان این ڈی ایم اے بریگیڈیئر مختار احمد کے مطابق بھارت نے لداخ ڈیم کے پانچ میں سے تین سپل ویز کھول دیئے، دریائے ستلج میں بھارتی پنجاب سے آنے والے پانی کے ایک بڑے ریلے کی وجہ سے سیلاب کا خطرہ ہے، اگلے 12 سے 24 گھنٹوں یہ پانی گنڈا سنگھ والا کے مقام پر پاکستان میں داخل ہو گا،اندازہ کےمطابق ڈیڑھ سے دو لاکھ کیوسک پانی پاکستانی حدود میں داخل ہو سکتا ہے۔

ترجمان این ڈی ایم اے نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم اے پنجاب ، ضلع قصور اور دریائے سندھ کے اطراف اضلاع کی انتظامیہ کو کسی بھی ہنگامی صورتحال کے لیے تیار رہنے کی ہدایت کی گئی ہے،بھارت کی طرف سے سرکاری طور پر ابھی تک کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔

 ترجمان این ڈی ایم اے نے کہا کہ اعداد و شمار اور معلومات ماہرین کے بھارتی میڈیا سے لیے گئے اندازہ کے مطابق لی گئی ہیں،گلگت بلتستان ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی اور دریائے سندھ کے اطراف تمام ضلعی انتظامیہ کو الرٹ جاری کر دیا گیا ہے۔